Published From Aurangabad & Buldhana

131 سال پرانا فٹ بال کلب موہن بگان اے ٹی کے میں ہوا ضم

کولکاتہ : بھارت کے 130 سالہ قدیم فٹ بال کلب موہن بگان نے جمعہ کے روز تین بار آئی ایس ایل کے فاتح اے ٹی کے ایف سی کے ساتھ انضمام کی باضابطہ رسم مکمل کی اور اب کلب کا نام تبدیل کرکے ‘اے ٹی کے موہن بگان’ رکھ دیا گیا ہے۔

اس انضمام کے موقع پر فٹ بال اسپورٹس ڈیولپمنٹ لمیٹڈ کی بانی نیتا امبانی نے دونوں کلبوں کے انضمام کا خیرمقدم کیا اور امید کی ہے کہ وہ بھارت کے فٹ بال میں ایک ‘سپر پاور’ بنیں گے۔ نیتا امبانی نے کہا کہ مجھے پوری امید ہے کہ دونوں کے انضمام سے ہمارے ملک میں فٹ بال کو فائدہ پہنچے گا اور بھارت کو فٹ بال کا ایک ‘سپر پاور’ بنانے کے اپنے خواب کو شرمندہ تعبیر کرنے میں مدد ملے گی۔

اے ٹی کے موہن بگان پرائیوٹ لمیٹڈ کے بورڈ نے فٹ بال کلب کے 131 سالہ قدیم ورثے کی نشاندہی کرتے ہوئے گرین اور میرون رنگ کی جرسی کو برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اے ٹی کے موہن بگان پرائیویٹ لمیٹڈ کے چیف مالک سنجیو گوینکا نے کہا کہ میں ان تمام سابق کھلاڑیوں کا شکریہ کرنا چاہتا ہوں جنہوں نے کئی دہائیوں سے موہن بگان کی عظیم میراث میں حصہ لیا ہے۔ میں اس نئے سفر میں ان کا آشیرواد لینا چاہتا ہوں۔ موہن بگان کلب بچپن سے ہی میرے دل سے قریب رہا ہے ۔

مجھے یہ اعزاز حاصل ہے کہ گرین اور میرون جرسی میں ان کے بہترین فٹ بال سے لطف اندوز ہوا ہوں۔ ہم وراثت کا احترام کرتے ہیں اور اس جرسی کو برقرار رکھتے ہیں جس کی ماضی کی کئی نسلوں نے پسند کیا اور احترام دیا ہے۔ میرا خواب ہے کہ اے ٹی کے موہن بگان کو عالمی سطح کی ٹیم بنائیں جو بین الاقوامی سرکٹ میں اپنی شناخت بناسکے۔

بورڈ آف کنٹرول فار کرکٹ ان انڈیا (بی سی سی آئی) کے صدر اور اے ٹی کے کے شریک مالک سورو گنگولی نے کہا کہ میں اے ٹی کے اور موہن بگان کے ایک ساتھ آنے کا تہہ دل سے خیر مقدم کرتا ہوں۔ برانڈ نام اے ٹی کے موہن بگان تاریخ رقم کرے گا۔

اے ٹی کے موہن بگان پرائیوٹ لمیٹڈ کے ڈائریکٹرز سورنجوئے بوس اور دیباشیش دتہ نے کہا کہ ہمیں واقعی خوشی ہے کہ اے ٹی کے موہن بگان گروپ نے سبز اور میرون رنگ کی جرسی کو برقرار رکھنے پر اتفاق کیا ہے اور ‘پال تولہ نوکا’ کی شبیہہ کو کلب کے رنگ کے طور پر استعمال کیا جائے گا۔

یو این آئی

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!