Published From Aurangabad & Buldhana

کرناٹک میں یدیورپا سرکار مشکل میں ، کانگریس نے کیا استعفی کا مطالبہ

کرناٹک میں یدیو رپا کی قیادت میں بی جے پی حکومت مشکل میں گھر گئی ہے ۔ وزیراعلی یودیو رپا کے اہل خانہ پر بد عنوانی کے الزامات لگ رہے ہیں ۔کانگریس نے کہا ہے کہ کرناٹک کے وزیراعلیٰ بی ایس یدیورپا عہدے کا غلط استعمال کر رہے ہیں اور ان کے اہل خانہ بدعنوانی میں ملوث ہیں لہٰذا مسٹر یدیورپا کو عہدے سے استعفیٰ دے دینا چاہیے اور ہائی کورٹ کے چیف جسٹس کی نگرانی میں الزامات کی تفتیش ہونی چاہیے۔

کانگریس کے تملناڈو، پدوچیری اور گوا کے انچارج دینش گُنڈو راؤ اور پارٹی کے ترجمان نے اتوار کے روز پریس کانفرنس میں کہا کہ مسٹر یدیورپا اقتدار اور عہدے کا غلط استعمال کر رہے ہیں اور ان کے اہل خانہ کے رکن سرکای کام میں دخل دے رہے ہیں۔ گھپلہ، بدعوانی اور عہدے کا غلط استعمال ریاست میں آئے دن کی کہانی بن گئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایک تازہ معاملے میں کچھ مقامی اخبارات اور چینل نے اسٹیٹ پولیوشن کنٹرول بورڈ کے چیئرمین سے عہدے پر تقرری کے عوض 16 کروڑ روپیے کی رشوت مانگنے کا انکشاف کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ان تمام الزامات کے پیش نظر پہلے مسٹر یدیورپا کو اخلاقیات کی بنیاد پر عہدے سے استعفیٰ دینا چاہیے۔

ترجمان نے کہا کہ مسٹر یدیورپا کے استعفیٰ دینے کے ساتھ ہی معاملے کی تفتیش ہائی کورٹ کے چیف جسٹس کی نگرانی میں ہونی چاہیے تاکہ ملزموں کو سزا مل سکے۔ پارٹی نے سی بی آئی، ای ڈی اور محکمہ انکم ٹیکس بھی اس معاملے کی تفتتیش کرکے سچائی سامنے لانے کی درخواست کی ہے۔

یو این آئی

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!