Published From Aurangabad & Buldhana

وہ دن دور نہیں جب معلومات حاصل کرنے کے لئے درخواست دینے کی ضرورت نہیں پڑے گی: گہلوت

راجستھان کے وزیراعلی اشوک گہلوت نے کہاہے کہ آئندہ دنوں میں عوامی معلومات پورٹل کے ذریعہ ایسا نظام نافذ کیا جائے گا کہ لوگوں کو کسی محکمہ سے معلومات حاصل کرنے کے لئے درخواست دینے کی ضرورت نہیں پڑے گی۔

مسٹر گہلوت نے آج معلومات کا حق (آر ٹی آئی) ایکٹ۔ 2005نافذ ہونے کی 15 ویں سالگرہ کے موقع پر منعقد قومی ویبینار سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس قانون کا نافذ ہونا معمولی بات نہیں ہے۔ یو پی اے کی چئیر پرسن محترمہ سونیا گاندھی کے عزم اور رہنمائی میں اس انقلابی قانون کے ذریعہ ملک کے تمام شہریوں کو معلومات حاصل کر نے کا حق دیا گیا ہے۔ محترمہ گاندھی اس وقت مرکزی حکومت کی قومی مشاورتی کونسل کی چیرپرسن تھیں، جس میں محترمہ ارونا رائے بھی رکن کے طورپر شامل تھیں۔

انہوں نے کہاکہ آر ٹی آئی سے پورے ملک کے انتظامی نظام میں شفافیت آئی ۔ اس کے لئے آر ٹی آئی کارکنان نے جدوجہد کی اور کچھ کارکنان کو اپنی جان بھی گنوانی پڑی۔ ہندستان کے عوام کو اس قانون کی ضرورت تھی۔ دنیا کے دیگر ممالک میں بھی ایسے حق معلومات نافذ ہوئے ہیں۔ معلومات کا حق نافذ ہونے کے بعد آر ٹی آئی انڈیکس میں ایک وقت ہم دنیا میں دوسرے نمبر پر تھے لیکن 2018آتے آتے ہندستان کی رینکنگ چھٹے نمبر پر اور اس کے بعد مزید نیچے آگئی ہے۔

مسٹر گہلوت نے بتایا کہ راجستھان کے عوامی معلومات پورٹل کی طرز پر مہاراشٹر اور کرناٹک میں بھی معلوماتی پورٹل تیار کئے جارہے ہیں۔ ان ریاستوں کے حکام اس کے لئے راجستھان کے حکام کے ساتھ رابطہ میں ہیں، یہ راجستھان کے لئے بھی خوشی کی بات ہے۔ انہوں نے کہاکہ ریاست میں جوابدہ انتظامیہ کے لئے اپنی گزشتہ مدت کار میں ہماری حکومت نے راجستھان عوام خدمات فراہم کرنے کی گارنٹی سے متعلق ایکٹ2011، سماعت کا حق 2012ایکٹ اور راجستھان پبلک اکوئپمنٹ میں شفافیت ایکٹ۔2012 جیسے قانون نافذ کئے تھے۔

انہوں نے کہاکہ آئندہ مہینہ ریاستی انفارمیشن کمیشن میں چیف انفارمیشن کمشنر اور دیگر انفارمیشن کمشنروں کی تقرری کرنے کے ساتھ ہی آر ٹی آئی درخواست کے ذریعہ معلومات حاصل کرنے کا عمل 31 دسمبرتک مکمل طورپر آن لائن کرنے کا اعلان کیا۔ انہوں نے کہا کہ اس کیلئے جلد ہی ریاست میں سوشل آڈٹ کے لئے گورننگ باڈی قائم کی جائے گی اور اس میں سماجی کارکنوں کوبھی نامزد کیا جائے گا۔ انہوں نے کووڈ۔19وبا کے دوران ریاستی حکومت کی طرف سے عام لوگوں کو دی گئی راحت کا بھی سوشل آڈٹ کرانے کا اعلان کیا۔

UNI

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!