Published From Aurangabad & Buldhana

مہنگائی کو لے کر آر بی آئی گورنر نے ظاہر کی تشویش

RBI Governor:آر بی آئی کے گورنر نے ملک بھر میں تیزی سے بڑھتی مہنگائی پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔ ریزرو بینک آف انڈیا کے گورنر شکتی کانت داس نے خبردار کیا ہے کہ اقتصادی سرگرمیوں میں تیزی کے باوجود افراط زر کی مسلسل بلند شرح معیشت کے لیے ایک بڑی تشویش کا باعث ہے۔ انہوں نے بڑھتی ہوئی مہنگائی پر قابو پانے کے لئے اس ماہ کے شروع میں پالیسی ریٹ میں 0.50 فیصد اضافہ کرتے ہوئے یہ بات کہی تھی۔

MPC کی میٹنگ سے ملی جانکاری
مرکزی بینک کے بدھ کو جاری مانیٹری پالیسی کمیٹی (MPC) کے اجلاس کی تفصیلات سے یہ جانکاری حاصل ہوئی ہے۔ داس کی سربراہی میں چھ رکنی MPC نے 8 جون کو مانیٹری پالیسی کا جائزہ پیش کیا۔ اس میں اہم پالیسی ریٹ ریپو میں لگاتار دوسری بار اضافہ کیا گیا تھا۔

مہنگائی ہے تشویش کی وجہ
آپ کو بتادیں کہ تین روزہ میٹنگ کی تفصیلات کے مطابق گورنر نے کہا ہے کہ مہنگائی کی اعلیٰ سطح تشویش کا باعث بنی ہوئی ہے، لیکن اقتصادی سرگرمیون میں بحالی جاری ہے اور اس میں تیزی آرہی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ افراط زر سے اثردار طریقے سے نمٹنے کے لئے یہ وقت پالیسی ریٹ میں ایک اور اضافے کے لئے مناسب ہے۔ اس لیے میں ریپو ریٹ میں 0.50 فیصد اضافہ کرنے کے حق میں ووٹ دوں گا۔ یہ ابھرتی ہوئی افراط زر کی ترقی کی صورتحال کے مطابق ہے اور سپلائی کے منفی مسائل کے اثرات کو کم کرنے میں مدد کرے گی۔

4.9 فیصد ہوگیا ہے ریپو ریٹ
داس نے کہا کہ قیمتوں میں استحکام کے لیے ریپو ریٹ میں اضافہ آر بی آئی کے عزم کو مضبوط کرے گا۔ مرکزی بینک کا بنیادی مقصد افراط زر کو کنٹرول میں رکھنا ہے۔ یہ درمیانی مدت میں پائیدار ترقی کے لیے پیشگی شرط ہے۔ کمیٹی کے تمام چھ ارکان نے ریپو ریٹ کو 0.50 فیصد سے بڑھا کر 4.9 فیصد کرنے کے حق میں ووٹ دیا۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!