Published From Aurangabad & Buldhana

مہاراشٹر میں سیلاب سے کہرام، ہزاروں افراد درماندہ، رشتہ داروں کی مدد کے لئے گہار

ممبئی: مہاراشٹر میں مانسون کی بارشوں سے کہرام مچ گیا ہے۔ ریاست کے کئی علاقوں میں ہو رہی بارشوں کے سبب سیلاب کی صورت حال پیدا ہو گئی ہے اور کئی اضلاع پانی میں ڈوب چکے ہیں۔ محکمہ موسمیات کی جانب سے کونکن ساحل کے لئے ریڈ اور آرنج الرٹ جاری کیا ہے۔

مہاراشٹر کے رتنا گری اور رائے گڑھ میں بارش کی وجہ سے حالات ابتر نظر آ رہے ہیں۔ رتنا گری کے چِپلون اور رائے گڑھ کے مہاڈ میں سیلاب آ گیا ہے اور راحت اور بچاؤ کے لئے این ڈی آر ایف کی ٹیموں کو مامور کیا گیا ہے۔ چِپلوم میں سیلاب کی وجہ سے ہزاروں افراد درماندہ ہو کر رہ گئے ہیں اور ان کے وہ رشتہ دار جو چپلون سے باہر موجود ہیں، مدد کے لئے گہار لگا رہے ہیں۔ سوشل میڈیا کے ذریعے امداد کی اپیل کی جا رہی ہے۔

اِگت پوری میں کسارا گھاٹ پر چٹان کھسکنے اور تیز بارش کے سبب سینٹرل ریل کی پٹری تک بہہ گئی ہے۔ ممبئی سے ملحقہ کلیان اور بھونڈی کو بھی بارش کے پانی نے اپنی آغوش میں لے لیا ہے۔ مہاراشٹر کے ٹھانے، پالگھر سمیت ملحقہ علاقوں میں بارش کے سبب حالات خوفناک نظر آ رہے ہیں۔ پالگھر میں بارش کے سبب تین افراد لقمہ اجل بن گئے ہیں۔ جبکہ پالگھر اور ٹھانے میں لگاتار ہو رہی بارش کی وجہ سے نقل و حمل پوری طرح درہم برہم ہو گئی ہے۔

وزیر اعلیٰ مہاراشٹر ادھو ٹھاکرے نے عہدیداران کے ساتھ میٹنگ کر کے صورت حال کی معلومات حاصل کی اور راحتی کاموں میں تیزی لانے کا حکم دیا ہے۔ ممبئی کے مضافاتی علاقوں میں بھاری بارش جہاں ایک طرف عام لوگوں کے لئے مصیبت بن کر آئی ہے وہیں، ممبئی کے لئے راحت کا باعث بھی بنی ہے، کیونکہ شہر میں پینے کے پانی کے تالاب تیزی سے بھر رہے ہیں۔ بی ایم سی کے مطابق آٹھ میں سے چار تالاب پوری طرح بھر چکے ہیں۔

قومی آواز

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!