Published From Aurangabad & Buldhana

ایودھیا میں کورونا کا قہر، رام جنم بھومی سمیت کئی مندروں کے دروازے بند

ایودھیا میں بھی کووڈ-19 کا انفیکشن بڑھتا جا رہا ہے۔ عالم یہ ہے کہ ایودھیا واقع درشن نگر کے میڈیکل کالج کو کووڈ اسپتال بنایا گیا ہے، وہیں پر بیسک ایجوکیشن افسر کے اسٹینو سمیت 8 لوگوں کی کورونا سے موت ہو گئی ہے۔ علاوہ ازیں ایودھیا کے سَنت سماج کے سربراہ کنہیا داس اور رنگ محل مندر کے مہنت رام شرن داس کورونا پازیٹو پائے گئے ہیں جن کا علاج چل رہا ہے۔

اس مشکل ماحول کو دیکھتے ہوئے رام جنم بھومی مندر سمیت ایودھیا کے تقریباً سبھی بڑے مندروں کے دروازے عقیدتمندوں کے لیے بند کر دیئے گئے ہیں۔ علاوہ ازیں ایودھیا شہر میں مقامی چھٹی جمعرات سمیت اتوار کو 2 دن دکانیں بند رہیں گے، جب کہ سینیٹائزر کا چھڑکاؤ سمیت شام 7 بجے سے لے کر صبح 9 بجے تک لاک ڈاؤن پر سختی سے عمل کرایا جا رہا ہے۔

قابل ذکر ہے کہ ایودھیا میں کووڈ-19 کے بڑھتے انفیکشن اور بڑھتی شرح اموات کی وجہ سے ہنگامہ برپا ہو گیا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ رام جنم بھومی مندر، کنک بھون، ناگیشورناتھ، ہنومان گڑھی سمیت سبھی اہم مندروں کے دروازے پوجا کرنے والوں کے لیے بند کر دیئے گئے ہیں۔ شری رام جنم بھومی تیرتھ چھیتر ٹرسٹ نے بھی ایک پریس نوٹ جاری کر عقیدتمندوں کے رام مندر دَرشن کو بند کیے جانے کی جانکاری دے دی ہے۔ سَنت مہنت ہو یا انتظامی افسر سبھی لوگوں سے ایودھیا آنے کی جگہ اپنے گھروں میں رہ کر پوجا کرنے کی اپیل کر رہے ہیں۔

قومی آواز

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!