Published From Aurangabad & Buldhana

70فیصد اسکولوں کی بجلی منقطع ہونے کے باوجود انتظامیہ کا

80% اسکول ڈیجیٹل ہونے کا دعویٰ

اورنگ آباد (اے۔ای) ضلع بھر کے ۷۰ فیصد ضلع پریشد اسکول یعنی دیڑھ ہزار اسکولوں کے بجلی بل بقایہ جات کی بناء پر ان کے بجھلی کنکشن کانٹ دئیے گئے ہیں ۔اس کے باوجود ضلع پریشد شعبہ تعلیم کی جانب سے ضلع کے ۷۵ تا ۸۰ فیصدی اسکولوں کے ڈیجیٹل ہونے کا دعوی کیا جارہا ہے ، جبکہ مذکورہ تعداد کے اسکولوں میں بجلی نہ ہونے کے سبب انتظامیہ کی جانب سے کیاجانے والا دعویٰ ٹائیں ٹائیں فِش ہوتا ہوا نظر آرہا ہے ۔واضح ہوکہ طریقہ تدریس واضح ہونے اور طلباء میں آموزش کے جذبہ کو فروغ دینے کے لئے تقریبا تمام ہی اسکولوں میں ڈیجیٹل وسائل کا استعمال کیا جارہا ہے ۔جبکہ اس معاملہ میں پرائیوٹ اسکولوں نے سبقت حاصل کی ہے ،جس کو مدنظر رکھتے ہوئے ضلع پریشد اسکولوں میں بھی ڈیجیٹل آلات کی فراہمی کا نظم کروایا گیا ہے ۔لیکن اس کے چلانے کے لئے درکار بجلی کا نہ ہونا ان آلات کے وجود کے ہونا اور نہ ہونا دونون برابر سمجھا جارہا ہے ۔ لہٰذا اس صورت حال کو مدنظر رکھتے ہوئے انتطامیہ کو چاہئے کہ جن اسکولوں کے بجلی بل بقایہ جات کی بناء پر ان کے بجلی کنکشن کانٹ دئیے گئے ان کے بل فوری طور پر ادا کئے جائے ۔تاکہ اس کے ذریعے ڈیجیٹل اسکول کے مقاصد کے حصول میں آسانی ہو ،جبکہ ڈیجیٹل آلات کے استعمال نہ ہونے کے ذریعے ان میں پیدا ہونے والی خرابی سے حفاظت کی جاسکے۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!