Published From Aurangabad & Buldhana

یو پی بارکونسل کی پہلی خاتون صدر درویش یادو کے قتل میں سامنے آئی سازش

اتر پردیش بارکونسل کی صدر درویش یادو کا کل آگرہ دیوانی کورٹ میں گولی مارکر قتل کر دیا گیا تھا۔ اب سامنے آیا ہے کہ اس قتل کے پیچھے درویش کے جاننے والے ہی شامل تھے۔ درویش یادو کے بھتیجے سنی کے ذریعہ کرائی گئی ایف آئی آر میں تین لوگوں پر قتل کی سازش کرنے کا الزام لگایا ہے۔ ان تین ملزمان میں منیش شرما، اس کی بیوی اور ایک دیگر وکیل گلیچھا ونیت شامل ہیں۔ سنی نے الزام لگایا کہ قاتل زیورات اور گاڑی پر قبضہ کرنا چاہتے تھے۔
ایک ویب سائٹ کے مطابق سنی نے بتایا کہ منیش کی اہلیہ وندنا کئی روز سے اس کی پھپو (بوا) درویش یادو کو فون پر دھمکی دے رہی تھی۔ منیش کی بیوی وندنا نے درویش سے کہا تھا کہ وہ اس کے شوہر سے زیورات اور پیسہ نہ مانگے۔ سنی کا الزام ہے کہ منیش نے اس کی پھپو (بوا) کے چیمبر پر بھی قبضہ کر رکھا ہے۔
سنی کے مطابق منیش کو بدھ کے روز وکیل گلیچھا ونیت سازش کے تحت اپنے ساتھ کورٹ لے کر آیا تھا اور اس کی بوا کا قتل کروا دیا۔ ذرائع کے مطابق منیش اور درویش تقریباً دس سال سے ایک ساتھ تھے اور ان کے مابین چیمبر کو لے کر کچھ ناراضگی چل رہی تھی اور درویش کچھ وقت سے اروند مشرا کے چیمبر میں بیٹھ رہی تھیں۔ اطلاعات کے مطابق ہائی کورٹ لکھنؤ بنچ میں اودھ بار ایسوسی ایشن کے صدر آنند منی ترپاٹھی نے اعلان کیا ہے کہ درویش یادو کے قتل کے احتجاج میں جمعرات یعنی آج سبھی وکیل بطور احتجاج کورٹ کی کارروائی کا بائیکاٹ کریں گے۔ انہوں نے کونسل سے جڑے تمام عہدیداران کے لئے سیکورٹی کا مطالبہ کیا ہے۔
یٹہ کی رہنے والی درویش یادو وہ پہلی خاتون تھیں جو اتر پردیش بار کونسل کی صدر منتخب ہوئی تھیں۔ وہ سال 2014 میں بار کونسل کی نائب صدر اور 2018 میں ایکٹنگ صدر بھی رہ چکی ہیں۔ 2010 میں وہ پہلی مرتبہ بار کونسل کی رکن منتخب ہوئی تھیں۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!