Published From Aurangabad & Buldhana

ہوشیار! یو آئی ڈی اے آئی کے نام سے خود بہ خود سیو ہورہا ہے یہ نمبر ، اگر آپ کے فون میں بھی ہے تو فورا کردیں ڈیلیٹ

آدھار ڈیٹا کی سیکورٹی کو لے کر مسلسل بحث چل رہی ہے۔ اسی درمیان آدھار سے وابستہ ایک اور معاملہ سامنے آیا ہے۔ کئی اینڈرائیڈ اور آئی فون یوزرس کے کنٹیکٹ لسٹ میں یو آئی ڈی اے آئی کے نام سے نمبر محفوظ ہوگیا ہے۔

آدھار ڈیٹا کی سیکورٹی کو لے کر مسلسل بحث چل رہی ہے۔ اسی درمیان آدھار سے وابستہ ایک اور معاملہ سامنے آیا ہے۔ کئی اینڈرائیڈ اور آئی فون یوزرس کے کنٹیکٹ لسٹ میں یو آئی ڈی اے آئی کے نام سے نمبر محفوظ ہوگیا ہے۔ اس کو کھولنے پر 1800-300-1947 ٹول فری نمبر نظر آرہا ہے۔
لوگوں کی مانیں تو ان کا کہنا ہے کہ انہوں نے اس کو کبھی محفوظ نہیں کیا ہے۔ فی الحال اس نمبر کو لے کر آدھار اتھاریٹی نے کوئی بیان جاری نہیں کیا ہے۔ گزشتہ سال اگست میں بھی کئی صارفین نے اسی طرح کی شکایت کی تھی۔ تاہم کچھ ایکسپرٹس کا کہنا ہے کہ کنٹیکٹ لسٹ میں یہ نمبر نظر آتے ہی اس کو ڈیلیٹ کردینا چاہئے۔
خیال رہے کہ اس سے پہلے اگست میں یوزرس کے فون میں اپنے آپ یو آئی ڈی اے آئی کا نمبر نظر آنے لگا تھا ۔ اس وقت لوگوں کی تنقید کے درمیان یو آئی ڈی اے آئی نے کہا کہ اینڈرائیڈ فون کے کنٹیکٹ لسٹ میں پہلے سے دستیاب نمبر 1800-300-1947 غلط ہے۔ اتھاریٹی نے کہا تھا کہ اس نے کسی بھی فون آپریٹر یا فون ساز کمپنی کو ایسی اجازت نہیں دی ہے کہ وہ اپنے آپ اس کا ٹرول فری نمبر یوزرس کے کنٹیکٹ لسٹ میں سیو کرسکیں۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!