Published From Aurangabad & Buldhana

گھر میں گھس کر 4 نوجوانوں نے کی خاتون کی اجتماعی عصمت دری، پھر پھندے پر لٹکایا

رات کو عورت اپنے دو بچوں کے ساتھ اپنے گھر میں سو رہی تھی، تبھی 11 بجے کے قریب عورت نے کسی کے گھر میں داخل ہونے کی آواز سنی۔

ہریانہ کے کیتھل ضلع کے کلایت علاقے کے ایک گاؤں میں ایک کنبہ اپنے کھیت میں مکان بنا کر رہ رہا تھا۔ شوہر کسی دوسرے رشتہ دار کو دوا دلانے کے لئے دوسرے شہر گیا ہوا تھا۔ رات کو عورت اپنے دو بچوں کے ساتھ اپنے گھر میں سو رہی تھی، تبھی 11 بجے کے قریب عورت نے کسی کے گھر میں داخل ہونے کی آواز سنی۔ جب عورت باہر آئی تو دیکھا کہ چار جوان اس کے گھر میں گھس چکے تھے۔ عورت نے شور مچایا لیکن مکان کھیت میں ہونے کی وجہ سے کوئی عورت کی آواز کو سن نہیں سکا۔

ان چار درندوں نے سو رہے بچوں کو پہلے کمرہ میں بند کر دیا اور پھر عورت کو ایک دوسرے کمرے میں لے گئے اور اس کی اجتماعی عصمت دری کی۔ عصمت دری کے بعد چاروں ملزمان عورت کو پھندے میں لٹکا کر فرار ہو گئے۔ لیکن کچھ دیر بعد رسی ڈھیلی پڑ گئی اور متاثرہ کے پیر زمین پر لگ گئے جس کی وجہ سے اس کی جان بچ گئی۔

متاثرہ عورت نے اس کے بعد اپنے شوہر کو فون کیا اور اپنی آپ بیتی سنائی۔ خاتون کا کنبہ وہاں پہنچا اور پھر اسے اسپتال لے گیا۔ فی الحال، خاتون کا علاج اسپتال میں چل رہا ہے۔ وہیں، اطلاع ملنے پر کیتھل ایس پی آستھا مودی جائے حادثہ پر پہنچیں اور متاثرہ کے گھر کا جائزہ لیا۔ متاثرہ کے بیان پر پولیس نے چاروں ملزمان کے خلاف معاملہ درج کر لیا ہے اور جانچ شروع کر دی ہے۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!