Published From Aurangabad & Buldhana

گنگا صفائی کے لئے جرمنی سے 990کروڑ کاقرض لے گا ہندوستان

کیرالہ سیلاب کے لئے بین الاقوامی مدد ٹھکرانے پر عوام میں ناراضگی

نئی دہلی: گنگا ندی صفائی کے لئے جرمنی سے ہندوستان 120ملین ایورو (تقریباً 990کروڑ روپئے) کا قرض لینے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس پیسہ کے ذریعہ اتراکھنڈ میں خراب پانی کی صفائی کواور مضبوط کرنے کے لئے لگایا جائیگا۔
جرمنی سفارت خانہ کی جانب سے کی جارہی کاروائی پر مزید روشنی ڈالتے ہوئے جیسپر ویئک نے کہا کہ اس پروجیکٹ میں سیوریج نظام میں استحکام و تبدیلی کا کام کیا جائیگاجس میں گھروں سے کنیکشن، خراب پانی کی صفائی کا پلانٹ بنایا جائیگا جس میں تقریباً روزانہ 15ملین لیٹر پانی صاف کیا جائیگا۔

اس پروجیکٹ میں 13سیویج پمپنگ اسٹیشن بھی بنائے جائینگے۔ اس پروجیکٹ کا مقصد گنگا ندی میں گندے پانی کو جانے سے روکنا ہے تاکہ ندی کے پانی کے معیار کو بڑھانا ہے۔اسی مقصد کے لئے جرمنی سے 990کروڑ روپئے کا قرض لیا جارہا ہے۔یہ قرض جرمن ڈیولپمنٹ بنک کے ذریعہ دیا جائیگا۔اس پروجیکٹ میں ہندوستان سے منتظم وکرانت تیاگی نے کہا کہ اس کے لئے گنگاء باکس نام سے جو پروجیکٹ بنایا گیا ہے وہ دانوبے بک کی طرز پر ہے جو یورپ کی ندی کو صاف کرنے کے لئے استعمال کیا گیا تھا۔

واضح ہو کہ اس سے قبل مرکزی حکومت کی جانب سے گنگاء صفائی کے لئے 7000کروڑ روپئے سے زائد روپیہ خرچ کیا جاچکا ہے لیکن اب تک اس میں کوئی کامیابی نہیں ملی ہے۔ دوسری جانب اس خرچ کو لیکر کئی سماجی کارکنان کی جانب سے اس معاملہ کی CBIجانچ کرانے کے مطالبات بھی کیے جاچکے ہیں۔

کیرالہ سیلاب میں بیرونی ممالک کی مدد نہ لینے اور یہاں قرض لینے پر عوام میں ناراضگی

گنگاء صفائی کے لئے اس قرض سے متعلق مرکزی حکومت پر ایک اور تنقید کی جارہی ہے ۔ ایک جانب کیرالہ کے سنگین سیلاب کے لئے مکمل مدد نہ دینے اور پھر بیرون ممالک کی مدد کو ٹھکرانے اور دوسری جانب گنگائکے لئے جرمنی سے قرض لینے پر عوام میں ناراضگی پائی جارہی ہے۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!