Published From Aurangabad & Buldhana

کپتان کوہلی نے سنچری کے ساتھ بنا ڈالے ایک درجن سے زائد ریکارڈ، توڑ دیا اظہرالدین کا ریکارڈ بھی

ناٹنگھم ٹسٹ میں کپتان وراٹ کوہلی نے 103 رن کے طور پر شاندار سنچری لگا کر ہندوستان کو مضبوط بنا دیا ہے۔

ناٹنگھم ٹسٹ میں کپتان وراٹ کوہلی نے 103 رن کے طور پر شاندار سنچری لگا کر ہندوستان کو مضبوط بنا دیا ہے۔ تاہم اس میراتھن اننگز کے دوران وراٹ کوہلی نے متعدد ریکارڈ اپنے نام کر لئے ہیں۔ وراٹ کی یہ 23ویں ٹیسٹ سنچری، جو انہوں نے 69 ٹیسٹ میچوں کی 118 اننگز میں لگایا ہے۔ انگلینڈ کے خلاف انگلینڈ میں دوسرا اور کل پانچویں سنچری ہے۔

جب کہ بہ طور کپتان انہوں نے 16 ویں ٹسٹ سنچری لگائی ہے۔ یہی نہیں، وراٹ کوہلی نے نمبر چار پر بلے بازی کرتے ہوئے 19ویں سنچری لگائی ہے۔ اس عظیم بلے باز نے اپنی 23ویں سنچری میں سے 13 غیر ممالک میں اور دس ہندوستان میں لگائے ہیں۔ تاہم وہ تیسری بار ٹیسٹ میچ کی تیسری اننگز میں سنچری لگانےمیں کامیاب رہے ہیں۔>

انگلینڈ کے خلاف ناٹنگھم میں وراٹ کوہلی نے 197گیندوں پر دس چوکوں کی مدد سے 103 رن کی دم داراننگز کھیلی ہے۔ یہ بطور کپتان وراٹ کی 129 اننگز میں 29ویں انٹرنیشنل سنچری ہے۔ جب کہ انہوں نے بطور بلے باز 250 اننگز میں 29 سنچری لگائے ہیں۔ یعنی انہوں نے اب تک کرکٹ کے تینوں فارمیٹ میں 379 اننگز میں 58 سنچری لگائے۔ وراٹ 58 انٹرنیشنل سنچری کے ساتھ سب سے زیادہ سنچری لگانے والے پانچویں بلے باز بن گئے ہیں۔ ریکارڈ سچن (100) کے نام ہے۔ تاہم ا س کے بعد رکی پونٹنگ نے 71، کمار سنگاکارا نے 63 اور جیک کیلس نے 62 سنچری لگائے ہیں۔

ناٹنگھم ٹیسٹ میں وراٹ کوہلی نے دونوں پاریوں میں 200 رن بنائے۔ ایسا انہوں نے 12ویں بار کیا ہے۔ تاہم ریکارڈ کمار سنگاکارا کے نام ہے۔ سنگاکارا نے ایسا 17 بار کیا تھا۔ علاوہ ازیں برائن لارا نے 15، ڈان بریڈ مین نے 14 اور ریکی پانٹنگ نے 13 بار ایسا کیا ہے۔

وراٹ کوہلی نے مسلسل تیسرے کیلنڈر سال میں انٹرنیشنل کرکٹ میں پانچ سے زیادہ شتک لگانے کا ریکارڈ بنایا ہے۔ انہوں نے ایسا 2016،2017 اور 2018 میں کیا ہے۔ سچن، اسٹیو اسمتھ اور ڈیویڈ وارنر نے ایسا مسلسل چار مرتبہ کیا ہے۔ کوہلی نے جنوبی افریقہ، انگلینڈ، نیوزیلینڈ اور آسٹریلیہ میں دس شتک لگائے ہیں۔ جب کہ ریکارڈ سچن کے نام ہیں، جنہوں نے 17 بار ایسا کیا ہے۔ راہل دروڑ نے بھی ایسا کیا ہے۔

انگلینڈ دورہ پر وراٹ کوہلی نے اب تک 440 رن بنا لئے ہیں۔ بطور کپتنا اس سے پہلے وہ آسٹریلیا میں 2014-15 میں 449 رن اور جنوبی افریقہ کے خلاف 2014-15 میں 286 رن بنا چکے ہیں۔ یہ ہندوستانی ریکارڈ ہے۔

کپتان کوہلی نے بطور کپتان چوتھی بار ٹیسٹ سیریز میں 400 پلس کا اسکور کیا ہے۔ جب کہ ریکارڈ سونیل گاواسکر کے نام ہے، جنہوں نے ایسا پانچ بار کیا تھا۔ سچن، دراوڑ اور اظہر نے ایسا ایک ایک بار کیا ہے۔ وراٹ کوہلی نے انگلینڈ کے دورہ پر ٹیسٹ سیریز میں اب تک 440 رن اپنے نام کر لئے ہیں۔ اس سے پہلے یہ ریکارڈ محمد اظہرالدین کے نام تھا جنہوں نے 1990 میں 426 رن بنائے تھے۔ وراٹ 440 رن بنانے والے واحد ایشیائی کپتان ہیں۔

بطور کپتان وراٹ کوہلی نے پانچ مرتبہ ٹیسٹ میچ کی دونوں ایننگز میں ہاف سنچوری لگائی ہے، جو کہ ہندوستانی ریکارڈ ہے۔ دھونی نے چار بار تو منسور علی خان پٹودی نے ایسا تین بار کیا ہے ۔ وراٹ کوہلی نے ایک ٹیسٹ کی دونوں ایننگز میں 9ویں بار ہاف سنچوری لگانے کا کارنامہ کیا ہے۔ اس سے قبل سونیل گواسکر، وی وی ایس لکشم ن اور سچن تندولکر نے بھی ایسا 9 بار کیا تھا۔ تاہم ریکارڈ راہل دروڑ کے نام ہے، جنہوں نے دس بار ایسا کیا ہے۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!