Published From Aurangabad & Buldhana

کرناٹک میں بی جے پی نے اتارے سب سے زیادہ کروڑ پتی اور مجرمانہ شبیہ والے امیدوار

کرناٹک انتخابات میں اپنی قسمت آزمارہے تقریباََ 2560 امیدواروں میں سے 391 نے خود قبول کیا ہے کہ ان پر مجرمانہ معاملہ درج ہیں، جس میں سے 254 کے خلاف سنگین مجرمانہ معاملہ ہیں۔ ریاست میں 12 مئی کو ہونے والے انتخابات سے قبل 2560 امیدواروں کی جانب سے فائل کی گئی افیڈیوٹ میں سے اسوسیئشن فار ڈموکریٹک رفارم (اے ڈی آر ) نے 2555امیدواروں کا تجزیہ کیا ہے ،جس میں سے 95 امیدواروں کی جانب سے دی گئی افیڈیوٹ پوری نہیں ہے یا تو بہت خراب ہے ۔

اپنے انتخابی حلف نامہ میں 25 امیدواروں نے بتایا کہ ان کے خلاف قتل کی کوشش ، وہیں 4 پر قتل کا معاملہ درج ہے ۔علاوہ ازیں 23 امیدواروں نے بتایا کہ ان کے خلاف خواتین سے بدسلوکی کا معاملہ درج ہے ۔

اے ڈی آر کی ریپورٹ کے مطابق ، بڑی پارٹیوں میں بی جے پی کے امیدواروں کے خلاف سب سے زیادہ مجرمانہ معاملہ درج ہیں۔ اور اس کے بعد کانگریس اور جے ڈی ایس کا نمبر ہے ۔

بی جے پی کے 244 امیدواروں میں سے 37 فیصد مطلب 83 امیدواروںکے خلاف مجرمانہ معاملہ ہیں، وہیں دوسری جاب کانگریس کے 220 امیدواروں میں سے 27 فیصد مطلب59 کے خلاف کیس درج ہے ۔

جے ڈی ایس کے 199 امیدواروں میں سے 41 کے خلاف اور نتیش کمار کے جے ڈی یو کے 25 امیدواروں میں سے 5 کے خلاف مجرمانہ معاملہ درج ہیں ۔ وہیں آپ پارٹی کے پانچ ممبران کے خلاف بھی ایسے معاملہ درج ہیں۔جب کہ 1090آزاد امیدوارمیں سے 108 نے اپنے حلف نامہ میں ان کے خلاف کریمنل کیس درج ہونے کی بات کہی ہے ۔

کرناٹک انتخابا ت کے امیدواروں میں سے 883 لیڈر ان کروڑ پتی ہیں۔ ان میں کانگریس کے 207 امیدوار علاوہ ازیں بی جے پی کے 93 فیصد امیدوار کروڑپتی ہیں ۔ غور کرنے والی ایک اور بات یہ ہے کہ یہاں انتخابات میں ہر امیدوار کے پاس تقریباََ 7.54 کروڑ کی جائیداد ہے ۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!