Published From Aurangabad & Buldhana

کرناٹک اسمبلی انتخابات : مندر درشن کے بعد اب درگاہ پر دعا مانگنے کیلئے پہنچے کانگریس صدر راہل گاندھی

رائچور : کرناٹک میں اپریل -مئی میں اسمبلی انتخابات ہونے والے ہیں ۔ ریاست میں انتخابی تشہیر کیلئے بی جے پی اور کانگریس نے ابھی سے ہی اپنی پوری طاقت جھونک دی ہے۔ راہل گاندھی کے دورہ کا آج تیسرا دن ہے ۔ گزشتہ دو دن راہل گاندھی نے مندر کے درشن کئےاور ریلیاں کیں ، لیکن آج انہوں نے ایک درگاہ پر حاضری دی۔

راہل گاندھی پیر کو کرناٹک کے وزیر اعلی سدا رمیا کے ساتھ رائچور سے گنج سرکل کے درگاہ پہنچے ۔ وہاں راہل گاندھی نے چادر چڑھائی اور دعا مانگی۔خیال رہے کہ گجرات اور ہماچل پردیش اسمبلی انتخابات کے دوران بھی راہل گاندھی نے نرم ہندتو کے راستے پر چلتے ہوئے کئی مندروں کے درشن کئے تھے ۔ اس کے بعد اب کرناٹک الیکشن کے پیش نظر بھی ایسا ہی کیا جارہا ہے۔

قبل ازیں اتوار کو کوپل میں ایک عوامی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کانگریس صدر نے وزیر اعظم مودی پر جم کر نشانہ سادھا ۔ انہوں نے وزیر اعظم مودی کا موازنہ ایسے کرکٹر سے کیا ، جو وکٹ کیپر کی جانب دیکھ کر بلے بازی کرتا ہے اور اس بات کو پتہ ہی نہیں ہوتا کہ گیند کہاں سے آرہی ہے۔

راہل گاندھی نے کہا کہ اگر سچن تیندولکر وکٹ کیپر کی طرف دیکھ کر بلے بازی کرتے تو کیا وہ ایک رن بھی بنا پاتے ؟ ہمارے وزیر اعظم ایسے کرکٹر ہیں جو وکٹ کیپر کی جانب دیکھتے ہیں اور انہیں یہ معلوم نہیں ہوتا کہ گیند کہاں سے آرہی ہے۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!