Published From Aurangabad & Buldhana

کانگریس چھوڑکرشیوسینا میں شامل ہوگئیں پرینکا چترویدی

کانگریس ترجمان پرینکا چترویدی نے ناراض ہوکرپارٹی سے استعفیٰ دے دیا ہے اوراب وہ شیوسینا میں شامل ہوگئی ہیں۔ اس کی اطلاع شیو سینا لیڈر سنجے راوت نے دی۔ پرینکا چترویدی گزشتہ کچھ دنوں سےکانگریس سےناراض چل رہی تھیں۔ دراصل گزشتہ دنوں پرینکا جب رافیل سے متعلق ایک پریس کانفرنس کرنےاترپردیش کےآگرہ پہنچی تھیں، تو وہاں پارٹی کےکچھ ممبران نےمبینہ طورپران سے بدسلوکی کی تھی۔ پرینکا چترویدی نے پارٹی کے ان کارکنان کو مبینہ طورپر ’غنڈہ‘ قراردیا تھا۔

پرینکاچترویدی کی شکایت کے بعد پارٹی نے بدسلوکی کرنے والے ممبران کو باہرنکال دیا تھا، لیکن بدھ کوانہیں پھر پارٹی میں شامل کیا گیا، جس کے بعد پرینکا چترویدی نے پارٹی کے برتاوکے تئیں ناراضگی ظاہرکی تھی۔

پریکنا چترویدی کے استعفیٰ پرکانگریس لیڈر کپل سبل نے کہا کہ ٹھیک ہے، ’یہ ان کے اورکانگریس کے درمیان میں ہے‘۔ اس سے قبل پرینکا نے کانگریس صدرراہل گاندھی کو خط لکھا، جس میں انہوں نے کانگریس کےساتھ اپنے 10 سال کے سفرکا ذکرتو کیا ہی ہے، ساتھ ہی گزشتہ دنوں میں ان کے ساتھ ہوئے حادثہ کے بارے میں بھی لکھا ہے۔

اس سےقبل پرینکا نے مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹرکے بایو سے کانگریس ترجمان ہونے کی اطلاع ہٹالی تھی۔ کیونکہ اس سے پہلے انہوں نے اپنی پروفائل میں ’قومی ترجمان کانگریس‘ لگا رکھا تھا، جو اب ڈیلیٹ کردیا گیا۔ پرینکا چترویدی کا شمار کانگریس کے مضبوط ترجمان میں ہوتا تھا، وہ پارٹی کا موقف میڈیا میں بہت بہتر طریقے سے رکھنے کے لئے جانی جاتی ہیں۔ وہ اپنے جوابات سے مخالف سیاسی جماعتوں کی بولتی بھی بند کردیتی ہیں۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!