Published From Aurangabad & Buldhana

پروٹم اسپیکرکے خلاف کانگریس کی عرضی پر سپریم کورٹ میں صبح 10:30 بجے ہوگی سماعت

بنگلورو: کرناٹک اسمبلی انتخابات میں ہفتہ کو ہونے والے فلور ٹسٹ کے لئے گورنر ویجوبھائی والا نے پروٹم اسپیکر کے طور پر بی جے پی کے ممبراسمبلی اور آر ایس ایس سے بچپن سے وابستہ کے جی بوپیا کو مقرر کیا ہے۔ کانگریس اور جے ڈی ایس نے کے جی بوپیا کی تقرری پر سوال اٹھاتے ہوئے جمعہ کی رات عدالت عظمیں عرضی دائر کی ہے۔ اس معاملے کو لے کر ہفتہ کی صبح 10:30 بجے عدالت عظمیٰ میں سماعت ہوگی۔
چیف جسٹس دیپک مشرا نے کرناٹک معاملے کی سماعت کر رہے جسٹس اے کے سکری کی صدارت والی تین ججوں والی بنچ کے سامنے اس معاملے کو فہرست کیا۔ اب تین رکنی بنچ صبح 10:30 بجے اس معاملے کی سماعت کرے گی۔

ذرائع کے مطابق کانگریس اور جے ڈی ایس کی طرف سے وکیل دیو دت کامت نے شام کو سپریم کورٹ کے رجسٹرار کے سامنے عرضی دائر کی، لیکن عرضی میں کچھ خامیاں بتائی گئیں، جسے بعد میں ٹھیک کرلیا گیا۔


نئی عرضی دیر رات رجسٹری میں دائر کی گئی اور سپریم کورٹ کے رجسٹرار اس پر غوروخوض سے متعلق احکامات کے لئے اسے لے کر چیف جسٹس کی رہائش گاہ پر پہنچے۔
درخواست میں بی جے پی ممبراسمبلی بوپیا کو عارضی (پروٹم) اسپیکرتقرر کئے جانے کے فیصلے کو منسوخ کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ کانگریس نے اسے روایت کے خلاف بتایا ہے کیونکہ روایت کے مطابق اس عہدہ پر عام طور پر سب سے سینئر رکن اسمبلی کی تقرری کی جاتی ہے۔ درخواست میں گورنر کے ذریعہ ایک کم سینئر ممبراسمبلی کو اسپیکر نامزد کرنے کو غیرآئینی قدم بتایا گیاہے۔
واضح رہے کہ کرناٹک کے گورنر کے ذریعہ بی جے پی کو حکومت بنانے کی دعوت دینے کے خلاف کانگریس اور جے ڈی ایس کی عرضی پر سماعت کے بعد سپریم کورٹ نے فلور ٹسٹ کا فیصلہ سنایا ہے۔ سبھی فریق کی دلیلیں سننے کے بعد عدالت نے ہفتہ کی شام 4 بجے فلور ٹسٹ کرانے کا حکم دیا ہے۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!