Published From Aurangabad & Buldhana

پاکستان کا کرکٹ ٹیم کو دورہ انگلینڈ پر بھیجنے کا فیصلہ

پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے رواں سال مکمل سیریز کے لیے اپنی قومی ٹیم کو دورہ انگلینڈ پر بھیجنے کا اصولی فیصلہ کر لیا تاہم کسی بھی کھلاڑی کو دورے کے لیے مجبور نہیں کیا جائے گا۔ پی سی بی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر وسیم خان نے ڈان نیوز کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان نے تین ٹیسٹ اور تین ٹی 20 میچوں کے لئے نظریاتی طور پر انگلینڈ دورے پر جانے پر اتفاق کیا ہے۔

وسیم خان نے کہا کہ دورہ انگلینڈ کے حوالے سے اصولی فیصلہ کیے جانے کے باوجود صورتحال کا جائزہ لیتے رہیں گے اور کسی بھی کھلاڑی کو دورہ انگلینڈ پر جانے کے لیے مجبور نہیں کیا جائے گا۔ان کا کہنا تھا کہ اگر کوئی کھلاڑی نہیں جانا چاہے گا تو پاکستان کرکٹ بورڈ اس کے خلاف کوئی ایکشن نہیں لے گا اور دورہ انگلینڈ کے حوالے سے پہلے حکومت پاکستان سے بھی اجازت لیں گے۔انہوں نے مزید کہا کہ میری اطلاع کے مطابق تمام کرکٹرز انگلینڈ جاکر کھیلنے کے حق میں ہیں اور 25 کھلاڑیوں کو چارٹرڈ فلائٹ کے ذریعے جولائی کے پہلے ہفتے میں انگلینڈ بھیجنے کا منصوبہ ہے۔انہوں نے دوٹوک الفاظ میں کہا کہ کھلاڑیوں کی صحت اور سیکیورٹی پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔

وسیم خان نے کہا کہ موجودہ حالات میں کرکٹ کی بحالی بہت ضروری ہے اور امید ظاہر کی کہ 2022 میں آسٹریلیا اور انگلینڈ کی ٹیمیں بھی پاکستان آئیں گی۔واضح رہے کہ کورونا وائرس کے سبب دنیا بھر کی کھیلوں کی سرگرمیاں بری طرح متاثر ہوئی ہیں اور رواں سال شیڈول کھیلوں کے بڑے بڑے مقابلے ملتوی یا منسوخ کردیے گئے ہیں۔
اس سے قبل کورونا وائرس کے سبب پاکستان کا دورہ آئرلینڈ اور نیدرلینڈز بھی منسوخ ہو چکا ہے۔

UNI

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!