Published From Aurangabad & Buldhana

پاکستان مقبوضہ کشمیر سے بے گھر ہو کر آئے لو گوں کو بی جے پی حکومت 5.5لاکھ دے گی

ملک کی تقسیم کے بعد پاکستان سے بے گھر ہوئے 5300 خاندانوں کو فی خاندان ساڑھے پانچ لاکھ روپے کی مرکزی مدد دی جائے گی ۔ وزیر اعظم نریندر مودی کی صدارت میں بدھ کو یہاں ہوئی کابینہ کی میٹنگ میں یہ فیصلہ کیا گیا ۔ سال1947 میں ملک کی تقسیم اور سال 1948 میں جموں و کشمیر کے ہندوستان میں شامل ہونے کے بعد پاکستان کے قبضے والے کشمیر سے 5300 خاندان بے گھر ہوکر آئے۔ یہ لوگ کشمیر میں رہنے کی بجائے دیگر ریاستوں میں چلے گئے تھے اور بعد میں پھر جموں کشمیر میں آکر مقیم ہوگئے۔ ایسے خاندانوں کو امدا د کی رقم نہیں دی گئی تھی۔

میٹنگ کے بعد اطلاعات و نشریات کے وزیر پرکاش جاوڈیکر نے بتایا کہ ان خاندانوں کے ساتھ اب انصاف کیا گیا ہے۔ اس امداد کے تحت ہر خاندان کو ساڑھے پانچ لاکھ روپے کی مدد ملے گی۔ انہوں نے بتایا کہ سال 2016 میں وزیر اعظم مودی نے پی او کے سے بے گھر ہوکر آئے لوگوں کیلئے 5.5 لاکھ روپے فی کس کنبہ کے پیکج کا اعلان کیا تھا ، لیکن اس وقت اس میں 5300 کنبے شامل نہیں ہوسکے تھے کونکہ وہ جموں و کشمیر سے باہر تھے اور ان کا نام نہیں آیا تھا ۔ انہوں نے بتایا کہ آج کے فیصلہ سے 5300 کنبوں کو اس میں شامل کرلیا گیا تھا ۔ جاوڑیکر نے کہا کہ اس فیصلہ سے ان کنبوں کے ساتھ انصاف ہوا ہے ، اس فیصلے کا پورے کشمیر وادی میں خیرمقدم کیا جائے گا ۔

انہوں نے بتایا کہ جموں و کشمیر میں بے گھر لوگوں کے کئی گروپ ہیں ۔ اس کے تحت ایک گروپ ایسے بے گھروں کا ہے جو 1947 کے بعد آیا ۔ دوسرا گروپ ایسے بے گھروں کا ہے جو جموں و کشمیر کے اںضمام کے بعد آیا ۔ اس میں 5300 کنبے ایسے تھے جو پی او کے سے آئے تھے ، لیکن دیگر ریاستوں میں چلے گئے تھے ۔ مرکزی وزیر نے کہا کہ جو پھر سے جموں و کشمیر آگئے ہیں ، انہیں اس میں شامل کیا گیا ہے ۔

یو این آئی

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!