Published From Aurangabad & Buldhana

پاکستان: حیوانیت کی ساری حدیں پار کر کچھ افراد نے قبر کھود کر خاتون کی لاش کے ساتھ کی آبرو ریزی

کراچی: پاکستان کے کراچی سے کچھ نامعلوم افراد کی گھناؤنی اور خوفناک کرتوت سامنے آئی ہے جہاں لانڈھی میں واقع قبرستان میں مدفون ایک خاتون کی لاش کو قبر سے نکال کر اس کے ساتھ اجتماعی آبروریزی کی گئی۔ ذرائع نے بتایا کہ مدفون خاتون کے لواحقین اس خوفناک واقعہ کے سلسلہ میں کوئی رپورٹ درج نہیں کرنا چاہتے۔

اس گھناؤنے اسکینڈل کے سامنے آنے کے بعد اسماعیل گوٹھ قبرستان کے قریب بڑی تعداد میں خواتین کے لواحقین اور ان کے رشتہ دار جمع ہوئے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ مدفون لاش کو کچھ لوگوں نے قبر سے باہر نکلا اور اس کے ساتھ اجتماعی آبروریزی کی۔ میت کو اس واقعہ سے ایک دن پہلے ہی دفن کیا گیا تھا۔

’جیو نیوز‘ نے منگل کو اس واقعہ کی جانکاری دیتے ہوئے کہا کہ اس گھناؤنے واقعہ کو انجام دینے میں کتنے لوگ شامل تھے اس کا پتہ ابھی نہیں چل سکا ہے۔متوفیہ خاتون کے گھر والوں نے کہا کہ قبرستان میں دیکھ بھال کے لئے ذمہ دار نگراں نے انہیں بتایا کہ ایک کتے نے تازہ قبر سے سلیب ہٹا دی تھی، لیکن مدفون خاتون کے لواحقین ایسا نہیں مانتے کہ کتا قبر سے سلیب ہٹانے کے قابل ہو گا، انہوں نے یہ بھی کہا کہ گورکن قبرستان سے غائب تھا۔

دوسری طرف، پولس نے جائے وقوعہ سے ثبوت جمع کیے ہیں اور تصدیق کی ہے کہ گورکن لاپتہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس کی تلاش کے لئے چھاپے مارےجا رہے ہیں۔ مدفون خاتون کے رشتہ داروں نے پولس کے سامنے اس معاملہ پر کوئی قانونی کارروائی کرنے کی خواہش ظاہر نہیں کی ہے اور انہوں نے اس بات پر زور دیا ہے کہ مستقبل میں ایسا واقعہ دوبارہ نہیں ہونا چاہیے۔

یو این آئی

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!