Published From Aurangabad & Buldhana

پاکستان انتخابات LIVE: رجحان میں معلق اسمبلی کے امکانات، عمران کی پارٹی آگے

10.45 PM
عمران کی پارٹی کی سنچری مکمل، 103 سیٹوں پر سبقت

عمران خان کی پارٹی پی ٹی آئی نے 103 سے زائد سیٹوں پر سبقت بنا لی ہے اور نواز شریف کی پارٹی پی ایم ایل این سے بہت آگے نکل چکی ہے۔ پی ایم ایل این اس وقت محض 52 سیٹوں پر آگے ہے۔ پاکستان پیپلز پارٹی 32 سیٹوں پر سبقت کے ساتھ تیسرے مقام ہے۔

10.33 PM
نواز شریف کے بھائی شہباز 4 ہزار سے زائد ووٹوں سے آگے
پاکستان مسلم لیگ (نواز) کی طرف سے وزیر اعظم عہدہ کے امیدوار اور سابق وزیر اعظم نواز شریف کے بھائی شہباز شریف قومی اسمبلی-249 (کراچی مغرب) میں سبقت بنائے ہوئے ہیں۔ اس وقت وہ اپنے مخالف سے 4230 ووٹوں سے آگے ہیں۔

10.28 PM
قومی اسمبلی میں عمران کی پارٹی نے 93 سیٹوں پر سبقت بنائی
عمران خان کی پارٹی پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے تازہ رجحان کے مطابق 93 سیٹوں پر اپنی سبقت بنا لی ہے۔ دوسرے مقام پر نواز شریف کی پارٹی پاکستان مسلم لیگ (ن) ہے جو 52 سیٹوں پر آگے چل رہی ہے۔ پاکستان پیپلز پارٹی 30 سیٹوں پر سبقت کے ساتھ تیسرے مقام پر ہے۔

10.12 PM
پنجاب اسمبلی میں بھی عمران کی پارٹی نے سبقت حاصل کی
پنجاب اسمبلی، جہاں عمران خان کی پارٹی پی ٹی آئی اور پاکستان مسلم لیگ (نواز) کے درمیان کانٹے کی ٹکر دیکھنے کو مل رہی تھی، وہاں پی ٹی آئی نے سبقت حاصل کر لی ہے۔ جیو ٹی وی کے تازہ رجحان کے مطابق پنجاب اسمبلی میں پی ٹی آئی 59 سیٹوں پر آگے چل رہی ہے جب کہ پی ایم ایل این 45 سیٹوں پر آگے ہے۔

09.46 PM
سندھ اسمبلی میں ’پی پی پی پی‘ 31 سیٹوں پر آگے
پاکستان میں ووٹنگ کی گنتی تیزی کے ساتھ جاری ہے۔ پاکستانی ٹی وی چینل ’جیو‘ پر جاری رجحان کے مطابق سندھ اسمبلی میں پاکستان پیپلز پارٹی 31 سیٹوں پر آگے چل رہی ہے اور دوسری پارٹیاں اس سے بہت پیچھے ہیں۔ یہاں عمران خان کی پی ٹی آئی 4 سیٹوں پر جب کہ پی ایم ایل این محض 1 سیٹ پر آگے ہے۔

09.28 PM
عمران کی پارٹی پی ٹی آئی 85 سیٹوں پر آگے، پی ایم ایل این دوسرے مقام پر
پاکستانی ٹی وی ’اے آر وائی‘ کے مطابق رجحانوں میں پی ٹی آئی ابھی تک سب سے آگے ہے۔ وہ 85 سیٹوں پر آگے چل رہی ہے جب کہ دوسرے مقام پر پی ایم ایل این ہے جو 52 سیٹوں پر آگے ہے۔ پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی پی) تیسرے مقام پر ہے جو 25 سیٹوں پر آگے چل رہی ہے۔

09.05 PM
پنجاب اسمبلی میں پی ٹی آئی اور پی ایم ایل این کے درمیان کانٹے کی ٹکر
عمران خان کی پارٹی پی ٹی آئی اور پی ایم ایل این کے درمیان پنجاب اسمبلی میں کانٹے کی ٹکر دیکھنے کو مل رہی ہے۔ پاکستانی ٹی وی کے مطابق دونوں 36-36 سیٹوں پر آگے چل رہی ہے۔

09.02 PM
چین نے پاکستان کو کیا سیلیوٹ
پاکستان میں چین کے سفیر لیجیان جھاؤ نے پاکستان میں پولنگ کا عمل مکمل ہونے پر مبارکباد دی ہے۔ سفیر نے ٹوئٹ کر کے کہا ہے کہ پاکستان میں اس تاریخی موقع کا گواہ بننا میری خوش قسمتی رہی۔ انھوں نے کہا کہ پاکستان کا الیکشن کمیشن سیلیوٹ کا حقدار ہے۔

08.33 PM
رجحان میں پی ٹی آئی آگے لیکن مکمل اکثریت حاصل کرنا مشکل
پاکستان کے کچھ ٹیلی ویژن پر نشر کی جا رہی خبروں کے مطابق عمران خان کی پارٹی پی ٹی آئی سب سے آگے نظر آ رہی ہے لیکن جو رجحان سامنے آ رہے ہیں اس سے معلوم ہوتا ہے کہ کوئی بھی پارٹی مکمل اکثریت حاصل نہیں کر پائے گی۔ جیو نیوز کے مطابق 272 میں سے 167 سیٹوں کے شروعاتی رجحانات سامنے آئے ہیں جس کے مطابق پی ٹی آئی کو 51 سیٹ اور پاکستان مسلم لیگ (ن) کو 41 سیٹیں ملتی ہوئی نظر آ رہی ہیں۔قابل ذکر ہے کہ پاکستانی عام انتخابات کے لئے ووٹنگ مکمل ہو گئی ہے اور پاکستان قومی اسمبلی (نیشنل اسمبلی) کی 272 سیٹوں کے لئے جو 3459 امیداوار میدان میں ہیں ان کی قسمت کا فیصلہ کچھ ہی گھنٹوں میں آنے والا ہے۔ ان امیدواروں میں 1632 امیدوار پنجاب سے، 824 سندھ سے 725 اور بلوچستان سے 287 امیدوار میدان میں ہیں۔نیشنل اسمبلی کی 272 سیٹوں میں سے نیشنل اسمبلی کی دو سیٹوں پر انتخابات ملتوی کر دئے گئے ہیں۔

07.39 PM
کئی بوتھوں پر ووٹوں کی گنتی شروع
پاکستان میں شام 6 بجے کے بعد ووٹنگ ختم ہو گئی اور اس کے ساتھ ہی کئی بوتھوں پر ووٹوں کی گنتی بھی شروع ہو چکی ہے۔ پاکستان انتخابی کمیشن کی گائیڈ لائن کے مطابق شام 7 بجے سے پہلے نتائج کا اعلان نہیں کیا جا سکتا اس لیے امکان ظاہر کیا جا رہا ہے کہ 8 بجے کے بعد کچھ اشارے سامنے آنے لگیں گے۔

06.14 PM
عمران خان کو نوٹس جاری
پاکستان الیکشن کمیشن نے عمران خان کے نام نوٹس جاری کیا ہے۔ ووٹنگ کے دوران عمران خان پر ویڈیو ریکارڈنگ کرانے کا الزام عائد کیا گیا ہے۔ ایسی صورت میں ان کا ووٹ رَد بھی کیا جا سکتا ہے۔قابل ذکر ہے کہ آج پورے پاکستان میں ووٹنگ جاری ہے۔ شام 6 بجے تک ووٹنگ ہوگی۔ 272 سیٹوں پر 3549 امیدوار انتخاب لڑ رہے ہیں جن میں 60 سیٹیں خواتین کے لیے محفوظ ہیں جب کہ 10 فیصد سیٹیں ہندوؤں سمیت دوسرے مذہبی اقلیتوں کے لیے محفوظ ہیں۔

05.29 PM
نواز شریف کو ووٹ نہیں ڈالنے دیا گیا
پاکستان کے سابق وزیر اعظم نواز شریف کو آج ووٹ نہیں ڈالنے دیا گیا۔ اس بات سے ناراض مسلم لیگ (ن) حامی ووٹرس نواز شریف بن کر ووٹ ڈالنے کے لیے گھر سے باہر نکلے۔ اس سلسلے میں مسلم لیگ (ن) کے ٹوئٹر ہینڈل پر اطلاع دی گئی ہے۔

04.31 PM
انتخابی کمیشن نے ن لیگ کی پولنگ کا وقت بڑھانے کی اپیل ٹھکرائی
پاکستان الیکشن کمیشن نے ن لیگ کی اس درخواست کو مسترد کر دیا ہے جس میں اس نے پولنگ کے وقت میں ایک گھنٹہ کے اضافہ کا مطالبہ کیا تھا۔ پی ایم ایل این نے سست پولنگ کے سبب یہ درخواست کی تھی۔ انتخابی کمیشن نے کہا کہ پولنگ کا وقت آگے نہیں بڑھایا جائے، حالانکہ جو ووٹر پولنگ مرکز میں قطار میں لگ چکے ہوں گے انہیں اپنا ووٹ 6 بجے کے بعد بھی کاسٹ کرنے کی اجازت دی جائے گی۔

04.23 PM
صحافیوں کے داخلے پر پابندی
لاہور کے علاقے مزنگ میں صحافیوں کو ایک پولنگ سٹیشن میں نہیں جانے دیا جا رہا۔ بی بی سی اردو کے مطابق وہاں تعینات سکیورٹی فورسز کے ایک اہلکار کا کہنا تھا کہ انہیں حکم دیا گیا ہے کہ کسی رپورٹر کو اندر نہ جانے دیا جائے چاہے اس کے پاس ایکریڈیٹیشن کارڈ ہی کیوں نہ ہو۔

02.13 PM
جمہوریت ہی بہترین انتقام ہے: بلاول بھٹو
پاکستان پیپلز پارٹی کے سربراہ اور پہلی بار الیکشن میں حصہ لینے والے بلاول بھٹو نے ووٹ دینے کے بعد ٹویٹ میں کہا کہ ’ہر ووٹ کی اہمیت ہے۔ جمہوریت ہی بہترین انتقام ہے۔‘

02.02 PM
کوئٹہ دھماکہ پاکستان کے دشمنان کی سازش: عمران خان
پی ٹی آئی کے سربراہ عمران خان نے کوئٹہ دھماکہ کو پاکستان کے دشمنان کی انتخابی عمل کو متاثر کرنے کی سازش قرار دیا ہے۔ عمران کے ٹوئٹ پر لکھا، ’’کوئٹہ میں دہشت گردوں کی طرف سے کیا گیا دھماکہ قابل مذمت ہے، یہ پاکستان کے دشمنان کی طرف سے جمہوری عمل کو متاثر کرنے کی سازش ہے۔ بے گناہوں کی قیمتی جانوں کے ضیاع پر میں دکھی ہوں۔ پاکستانی دہشت گردوں کو لازمی طور پر شکست دیں گے۔‘‘

01.43 PM
عمران خان نے اپنا ووٹ ڈال دیا
پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے اپنا ووٹ ڈال دیا ہے۔ ان کی پارٹی پاکستان تحریک انصاف کے ٹوئٹر اکاؤنٹ سے ٹویٹ میں یہ سوال کیا گیا ہے کہ آپ کے خیال میں انہوں نے کس کو ووٹ دیا ہوگا؟ حالانکہ ہیش ٹیگ کا استعمال کرتے ہوئے خود ہی جواب میں ’بلے پہ ٹھپا‘ بھی لکھ دیا گیا ہے۔

12.33 PM
کوئٹہ میں پولنگ اسٹیشن کے نزدیک دھماکہ، 31 افراد ہلاک، 28 زخمی
کوئٹہ میں عام انتخابات کے لئے ہو رہے پولنگ کے دوران ایک پولنگ اسٹیشن کے نزدیک ہونے والے دھماکے میں مہلوکین کی تعداد 31 ہو گئی ہے جبکہ 28 افراد کے زخمی ہونے کی اطلاع ہے۔ بی بی سی کے مطابق یہ دھماکہ مشرقی بائی پاس پر واقع تعمیرِ نو پولنگ سٹیشن کے قریب ہوا۔سول ہسپتال کوئٹہ کے ترجمان وسیم بیگ نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے 20 سے زائد افراد کے ہلاک ہونے کی تصدیق کی اور بتایا کہ دھماکے میں تقریباً 30 افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔
ہلاک شدگان میں پولیس اہلکار بھی شامل ہیں۔ تاحال دھماکے کی نوعیت معلوم نہیں ہو سکی ہے۔ واضح رہے کہ پاکستان میں ہونے والے عام انتخابات کے لیے بلوچستان میں سخت سکیورٹی انتظامات کیے گئے ہیں۔

11.54 AM
Pakistan Election Updates:
پاکستانی روزنامہ ڈان کے مطابق کوئٹہ دھماکہ میں اب تک 5 افراد جان بحق ہو چکے ہیں جبکہ 12 زخمی بتائے جا رہے ہیں۔
یہ دھامکہ قومی اسمبلی 260 حلقہ میں صبح تقریباً 11 بجے ہوا۔جماعت ادعوی کے سربراہ حافظ سعید نے لاہور میں اپنا ووٹ ڈال دیا ہے۔
پنجاب کے راجن پور میں پی ٹی آئی اور ن لیگ کے کارکنان میں جھڑپ ہونے کی اطلاع ہے۔
کراچی کے ایک پولنگ مرکز سے ایک نامعلوم شخص کو حراست میں لیا گیا ہے۔

11.41 AM
پشاور میں فائرنگ کا تبادلہ، پی ٹی آئی کا کارکن ہلاک
پشاور سے موصول ہو رہی اطلاعات کے مطابق صوابی کے حلقہ پی کے47 میں عوامی نیشنل پارٹی اور پاکستان تحریک انصاف کے کارکنوں میں فائرنگ کا تبادلہ ہوا ہے، جس کی نتیجے میں پی ٹی آئی کا ایک کارکن جاں بحق ہو گیا اور دو افراد زخمی ہو گئے ہیں۔ زخمیوں کو اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ادھر پاکستانی میڈیا کے مطابق کوئٹہ میں دھماکہ ہوا ہے جس میں متعدد افراد زخمی ہو گئے ہیں۔

11.04 AM
پاکستان الیکشن اپ ڈیتس:
کراچی کی یثرب امام بارگاہ میں ووٹنگ جاری ہے، اس پولنگ اسٹیشن پر 1019 خواتین اور 1019 مرد ووٹرز ہیں۔ کلفٹن کے اس علاقے میں ووٹنگ 8 بجے شروع ہوگئی تھی اور اب تک زیادہ تر ووٹر خواتین تھیں۔کراچی کے علاقے گلشن اقبال میں نجی سکولوں میں قائم پولنگ سٹیشنوں کے بوتھ چھوٹے کلاس رومز میں قائم ہیں، جب تک ایک ووٹر ووٹنگ کا عمل مکمل کر کے نہیں نکلتا دوسرے ووٹر کی جگہ نہیں ہوتی۔احمد اکیڈمی گلشن اقبال 13ڈی کے ایک بوتھ میں تین ووٹ کاسٹ ہوئے جبکہ کل تعداد 300 ہے، جب کہ خواتین کے بوتھ میں 400 ووٹ ہیں جبکہ کاسٹ 12 ہوئے ہیں۔پشاور میں فہرستوں میں اپ ڈیٹس نہ ہونے کی شکایات۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!