Published From Aurangabad & Buldhana

ونچت سے اتحاد پر امتیاز جلیل کا پریس نوٹ انکا ذاتی نہیں بلکہ بلکہ پارٹی کا فیصلہ ہے؛ اسد اویسی

ایم آئی ایم صدر اسد اویسی نے ونچت سے اتحاد سے متعلق امتیاز جلیل کے بیان پر لگائی مہر

اورنگ آباد: گذشتہ کچھ دنوں سے ونچیت بہوجن اگھاڑی میں آپسی کھینچ تان کے بعد ایم آئی ایم کے ریاستی صدر و ایم پی سید امتیاز جلیل نے پریس نوٹ جاری کرکے ونچیت بہوجن اگھاڑی سے علیحدگی کا اعلان کیاتھا۔اعلان کے بعد ونچیت بہوجن اگھاڑی کے سربراہ پرکاش امبیڈکر نے ریاستی صدر امتیازجلیل کو نظرانداز کرتے ہوئے کہاتھا کہ جب تک ایم آئی ایم سربراہ اسدوالدین اویسی اعلان نہیں کرتے جب تک اتحاد قائم رہے گا۔اس کے بعد آج پریس کانفرنس منعقد کرکے پارٹی سربراہ اسدوالدین اویسی نے امتیازجلیل کے فیصلہ پر مہر لگادی ہے۔

گذشتہ کئی دنوں سے سیٹوں کے بٹوارے کولیکر دونوں میں رساکشی جاری تھی۔پرکاش امبیڈکر کی طرف سے ایم آئی ایم کو صرف آٹھ سیٹیں دینے پر ایم آئی ایم ناراض ہوگئی۔وجہ یہ ہے پچھلے اسمبلی انتخابات میں ایم آئی ایم کے دو ایم ایل اے منتخب ہوئے تھے اور کچھ جگہوں پر ایم آئی ایم دوسرے نمبر پررہی۔جس کو دیکھتے ہوئے ایم آئی ایم کوامید ہے کہ اس بار ایم آئی ایم کے ایم ایل اے تعداد اچھا اضافہ ہوسکتاہے۔

اسی کے تحت ایم آئی ایم نے ونچیت بہوجن اگھاڑی اتحاد سے ۰۰۱سیٹوں کی مانگ کی تھی۔جس کو ونچیت بہوجن اگھاڑی نے ٹھکراتے ہوئے صرف آٹھ سیٹ دینے کی بات کی۔جس کے بعد ایم آئی ایم کے ذمہ داران ناراض ہوگئے۔اس سارے معاملے کے بعد آخر اے آئی ایم آئی ایم کے سربراہ نے پریس کانفرنس کے ذریعے یہ واضح کردیا ہے کہ مہاراشٹر کے اسمبلی انتخابات کے مدنظر ریاستی صدر امتیاز جلیل کے ساتھ مہاراشٹر ٹیم جو فیصلہ لے گی وہ پارٹی کا فیصلہ ہوگا۔ایک طرح یہ اعلان کرنے کے بعد پرکاش امبیڈکر یہ ایک جھٹکا مانا جارہاہے۔اسدوالدین اویسی کے اس بیان کے بعد اب ونچیت بہوجن اگھاڑی کے سربراہ پرکاش امبیڈکر کیا ردعمل ہوگا ۔اس پر ہماری نظر رہے گی۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!