Published From Aurangabad & Buldhana

مہا راشٹر : فرنویس کے الزامات پر سینا کے سر براہادھو ٹھاکرے نے کہا:ہم زبان دیتے ہے تو نبھاتے ہے

مہاراشٹر کی سیاست میں بی جے پی اور شیو سینا کے درمیان تلخی اب کھل کر سامنے آگئی ہے ۔ دیویندر فڑنویس کے الزامات پر جواب دیتے ہوئے شیو سینا کے سربراہ ادھو ٹھاکرے نے کہا کہ ہم بی جے پی جیسے نہیں ہیں ، جو وعدہ کرتے ہیں ، اس کو نبھاتے ہیں ۔ بی جے پی نے صرف پانچ سال سیاست کی ۔ میں نے امت شاہ سے وزیر اعلی کے عہدہ کو لے کر واضح بات کی تھی ۔ ہم نائب وزیر اعلی کیلئے تیار نہیں تھے ۔

جمعہ کو پریس کانفرنس کرتے ہوئے شیو سینا سربراہ نے کہا کہ ہم کبھی اپنے وعدہ سے پیچھے نہیں ہٹتے ہیں ۔ بی جے پی نے ترقی کی جگہ صرف سیاست کی ۔ انہوں نے بال ٹھاکرے کے بچوں کو جھوٹا کہا ۔ ادھو ٹھاکرے نے کہا کہ الیکشن سے پہلے بی جے پی نے میٹھی میٹھی باتیں کیں ۔ اب ہم بی جے پی کے جھانسہ میں نہیں آئیں گے ، ہم برابری چاہتے تھے ، میں اب بھی انہیں دشمن نہیں مانتا ، ہمیں وزیر اعلی بنانے کیلئے فڑنویس کی ضرورت نہیں ہے ۔

ادھو ٹھاکرے نے کہا کہ مجھے دیویندر فڑنویس سے ایسے الزامات کی امید نہیں تھی ۔ ہم نے دیویندر فڑنویس کی وجہ سے ہی اتحاد جاری رکھا تھا ۔ انہوں نے پانچ سالوں کے کاموں کا سہرا اپنے سر ہی باندھ لیا ، ہم حکومت میں برابری چاہتے تھے ، نائب وزیر اعلی عہدہ ہمیں منظور نہیں تھا ۔

خیال رہے کہ اس سے پہلے جمعہ کو دیویندر فڑنویس نے راج بھون میں گورنر سے ملاقات کرکے وزیر اعلی کے عہدہ سے اپنا استعفی دیدیا ۔ استعفی کے بعد نامہ نگاروں سے بات چیت کرتے ہوئے فڑنویس نے کہا کہ عوام نے لوک سبھا میں ہمیں بڑی کامیابی دی ۔ اسمبلی انتخابات میں اتحاد کے طور پر ہم لوگوں کے درمیان گئے ، ہمارے اتحاد کو واضح اکثریت ملی اور بی جے پی سب سے بڑی پارٹی بن کر ابھری ۔

انہوں نے کہا کہ کئی معاملات پر تبادلہ خیال کیلئے میں نے ادھو ٹھاکرے کو فون کیا تھا ، لیکن انہوں نے میرا فون نہیں اٹھایا ۔ بی جے پی اور شیو سینا کے درمیان کبھی بھی وزیر اعلی کے عہدہ کو لے کر 50-50 کے فارمولہ پر فیصلہ نہیں ہوا تھا ۔ میں نے پارٹی صدر امت شاہ اور سینئر لیڈر نتن گڈکری سے بھی اس سلسلہ میں بات کی ، لیکن انہوں نے بھی وزیر اعلی کے عہدہ پر 50-50 فارمولہ پر کسی بھی طرح کے فیصلہ سے انکار کیا ۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!