Published From Aurangabad & Buldhana

مہاراشٹر: نہرونہ پٹیل ، فڑنویس نے وزیراعظم مودی کی ڈیڑھ لاکھ کتابوں کی مانگ کردی

ممبئی : مہاراشٹر حکومت جواہرلال نہرواور سردار پٹیل بلکہ وہ صرف وزیراعظم نریندرمودی کو ملک کا سب سے زیادہ پُراثر رہنماء مانتی ہے اور اسی وجہ سے ریاستی محکمہ تعلیم نے مودی پر تحریرکی جانے والی 59.42لاکھ کی مالیت کی ڈیڑھ لاکھ کتابوں کی مانگ کی اور پہلے وزیراعظم نہرواور سردارپٹیل سمیت دیگر لیڈروں پر محض چند ہزارروپے خرچ کیے ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ مذکورہ کتابیں ہندی ،انگریزی کے ساتھ ساتھ مراٹھی اور گجراتی میں بھی دستیاب ہوں گی،ان کتابوں کو ضلع پریشد کے اسکولوں کے کتب خانے میں رکھاجائے گا اور اوّل تا ہشتم جماعتوں کے طلباء خالی وقت میں ان کا مطالعہ کرسکیں گے۔

مخالفین کا کہنا ہے کہ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ ریاستی حکومت بچوں کے ذہن میں مودی کی امیج کو کافی بڑا بناکر پیش کرنے کی کوشش کررہی ہے ،اس کتاب میں 24صفحات پر مشتمل ایک کتابچہ بھی ہے،مودی کے عنوان سے اس کتابچہ میں وزیراعظم کے ابتدائی دور کو پیش کیا گیاہے جب وہ اپنے والد کے ساتھ چائے فروخت کرتے تھے۔

تعلیم کے محکمہ نے دیگر تاریخی شخصیتوں پر بھی 1,30,50,839 کتابوں کی مانگ کی ہے۔ ان میں سے سب سے پہلا مقام چھتر پتی شیواجی مہاراج کا مقام ہے جن کے لیے 3,40,982 کتابیں خریدی ہیں۔ اس کے بعدمرحوم سابق صدر اے پی جے عبدالکلام 3,21,328 کا نمبر آتا ہے،لیکن سیاستدانوں میں مودی کو اہمیت دی گئی ہے۔ اس میں صرف 1,635کتابیں نہرو پر اور قریب 2,675 کتابیں اندرا گاندھی پر مانگی گئی ہیں۔

گزشتہ ہفتے راجیہ سبھا کے اجلاس میں وزیر اعظم نریندر مودی نے اپنی تقریر میں سردار پٹیل کو جواہر لال نہرو سے بہتر بتایا تھا ،لیکن حیرت کی بات ہیکہ مہاراشٹر کے محکمہ تعلیم نے مودی کے ماڈل پٹیل پر ایک بھی کتاب آرڈر نہیں کی ہے۔اس مطالبہ میں مہاتما گاندھی پر 4,343 کتابیں، بھیم راؤ امبیڈکر پر 79, 388 کتابیں، سابق وزیر اعظم اٹل بہاری واجپئی پر 79،79, 388کتابیں اور سماجی مصلح مہاتما جیوتی باپھلے پر ،713 76کتابیں شامل ہیں۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!