Published From Aurangabad & Buldhana

ممبئی میں کورونا سے متاثرہ بچوں میں پُر اسرار بیماری کی علامات! ڈاکٹروں میں تشویش

ممبئی: کورونا وائرس کے بعد ممبئی میں اب ایک پُر اسرار بیماری کا پھیلاؤ پایا جا رہا ہے۔ ممبئی کے واڈیا اسپتال میں داخل تقریباً 100 کورونا پازیٹو بچوں میں سے 18 میں پیڈیا ٹرک ملٹی سسٹم انفلیمیٹری سنڈروم، کاوا ساکی نامی بیماری کی علامات نظر آ رہی ہیں، جس نے ڈاکٹروں میں تشویش پیدا کر دی ہے۔ اس بیماری کا انکشاف سب سے پہلے جاپانی بچوں کے امراض کے ماہر ٹیسسکو کاوا ساکی نے کیا تھا۔ اس بیماری میں مبتلا مریضوں میں بخار، جلد پر سرخ دھبے، آنکھوں کی سرخی، تھکان اور دست جیسی علامات ظاہر ہوتی ہیں اور اگر ٹھیک سے علاج نہ ہو تو یہ مرض مہلک بھی ثابت ہو سکتا ہے۔

واڈیا چلڈرن اسپتال میں میڈیکل ڈائریکٹر ڈاکٹر شکنتلا پربھو نے کہا، ’’دو بچوں کی موت ہوئی ہے۔ ایک بچہ کینسر کے ساتھ ساتھ کووڈ 19 سے بھی متاثر ہے اور ان میں سے ایک بچہ جو ہمارے پاس آیا تھا اس کی حالت نازک تھی۔ دو ہفتوں سے وہ بیماری میں مبتلا تھا۔ مریض کو وینٹی لیٹر پر رکھا گیا اور چھ گھنٹے میں اس کی موت ہو گئی کیوں کہ ہمیں اس کے ساتھ زیادہ وقت نہیں ملا۔‘‘ انہوں نے کہا کہ چار بچے ابھی صحتیاب ہو رہے ہیں اور بقیہ کو فارغ کر دیا گیا ہے۔

ایس آر سی سی چلڈرن اسپتال کے بچوں کے امراض کے ماہر اور کریٹیکل کیئر سوسائٹی کے سکریٹری ڈاکٹر امیش وورا نے بیماری کی کچھ علامات کے بارے میں بتایا ہے۔ اس بیماری میں مبتلا مریض کو پیٹ درد کے ساتھ ساتھ دو سے تین دنوں تک بخار رہتا ہے۔ دست کی شکایت ہوتی ہے، الٹی لگتی ہے، آنکھیں سرخ ہو جاتی ہیں۔ کچھ مریضوں کے آبلے پڑ جاتے ہیں اور جلد پر سرخ دھبے نظر آنے لگتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس بات پر توجہ دینے کی ضرورت ہے کہ اگر ایسی علامات نظر آئیں تو ڈاکٹر سے رابطہ قائم کریں۔

قومی آوازبیورو

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!