Published From Aurangabad & Buldhana

ممبئی: مساجد میں نمازیوں کو ملے گی ہر سہولت، نماز کی تیاریاں مکمل

شہر کی بیشتر مساجد کے باہر بلیک بورڈ پر ہدایات تحریر کی گئی ہیں اور اسٹیکر چسپاں کیے گئے ہیں۔ ان پر تحریر ہے کہ الحمدللہ حکومت نے شرائط وضوابط کے تحت مساجد کھولنے کا حکم دے دیا ہے۔

ممبئی: ممبئی میں مساجد میں نمازیوں کیلئے سہولیات فراہم کرنے کےلئے منتظمین نے تمام تیاریاں مکمل کرلی ہیں اور سبھی نے مقتدیوں کو حکومت کی ہدایات پر عمل کرنے کے لیے کہاہے۔ممبئی کی جامع مسجد،مینارہ مسجد ،تبلیغی مرکز چونا بھٹی،محمدعلی روڈ،مدنپورہ کی بڑی ہری مسجد کے ساتھ مضافات میں حضرت شیخ مصری مسجد،کربلامسجد،حاجی اسماعیل حاجی الانا سینی ٹوریم مسجد ،وڈالا کی ہری مسجف،بسندرہ کی جامع مسجد،ماہم کی مخدوم شاہ درگاہ مسجد اور حاجی علی درگاہ اور مسجد میں خصوصی انتظامات کیے گئے ہیں۔سادہ لباس میں پولیس اہلکار ان مساجد پر تعینات کیے گئے ہیں۔

شہر کی بیشتر مساجد کے باہر بلیک بورڈ پر ہدایات تحریر کی گئی ہیں اور اسٹیکر چسپاں کیے گئے ہیں۔ ان پر تحریر ہے کہ الحمدللہ حکومت نے شرائط وضوابط کے تحت مساجد کھولنے کا حکم دے دیا ہے۔مصلین سے گزارش ہے کہ ان قوانین وضوابط پر عمل کیا جائے،ماسک لگانا اور سوشل ڈسٹینشنگ ضروری ہے،صدر دروازے پر سنٹائزر لگانا اور مشین سے درجہ حرارت جانچ کرانا ضروری ہے۔مسجد میں اذان کے ساتھ کھل جا ئے گی،یعنی نصف گھنٹے پہلے کھول دی جائے گی۔اس موقع پر شیخ مصری کے مجاور اور مسجد کے ٹرسٹی ایڈوکیٹ آویز احمد جی نے کہاکہ تیاریاں مکمل ہوچکی ہیں اور اسٹیکر داخلی دروازے پر لگائے جارہے ہیں ،حکومت کے قوانین پر سختی سے عمل کیا جائے گا۔

واضح رہے کہ مہارشٹرحکومت نے 8 ماہ کے بعد ریاست میں مسجد اور مندر سمیت تمام مذہبی مقامات چند شرائط کے ساتھ کھولنے کی 16 نومبر سے اجازت دے دی ہے۔ تمام عبادت گاہوں میں ماسک پہن کر ہی اندر جانے کی اجازت ہوگی۔ اور صدر دروازے پر درجہ حرارت کی جانچ ہوگی اور مہاراشٹرحکومت نے سماجی دوری کے قواعد پر عمل کرنے کی ہدایت بھی کی ہے۔ زیادہ بھیڑ جمع نہ کرنے کے لیے بھی کہا گیا ہے۔

یو این آئی

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!