Published From Aurangabad & Buldhana

ملک میں خواتین غیر محفوظ ، بی جے پی گائے بچانے میں مصروف: ادھو ٹھاکرے

بی جے پی اور شیوسینا کے درمیان دوریاں مزید بڑھتی جا رہی ہیں۔ عدم اعتماد کی تحریک کے دوران شیو سینا نے پہلے وہپ جاری کر کے حکومت کی حمایت میں ووٹ دینے کو کہا لیکن کچھ ہی گھنٹوں کے بعد وہ اپنے اس فیصلہ سے منحرف ہو گئی۔ عدم اعتماد تحریک والے دن شیوسینا نے کہا کہ وہ کارروائی میں شامل نہیں ہو گی۔ اتوار کو بی جے پی کے صدر امت شاہ نے کارکنوں کو پیغام بھیجا کہ آئندہ انتخابات میں اکیلے دم پر الیکشن لڑنے کی تیاری کریں۔ ان سب کے بیچ شیوسینا صدر ادھو ٹھاکرے نے ’سامنا’ کو دئیے اپنے ایک انٹرویو میں کہا ہے کہ "شیوسینا حکومت پر شکنجہ کسنے کا کام کر رہی ہے۔”

انہوں نے کہا کہ شیوسینا ہندوستان کے عوام کی دوست ہے، کسی ایک پارٹی کی دوست نہیں ہے۔ وقت وقت پر مجھے اگر کوئی بات پسند نہ آئے تو اس وقت میں بولتا ہوں اور ویسا بولتا ہوں اور بولوں گا ہی۔ انہوں نے کہا کہ اگر ہم نے حکومت کی کسی بھی پالیسی کی مخالفت کی تو وہ ملک اور عوام کے مفاد کے لئے کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جو بھی کیا، کھلے عام کیا۔ ساتھ دیا تو وہ بھلے کھلے عام اور مخالفت کی تو وہ بھی کھلے عام کی۔

ٹھاکرے نے کہا کہ میں پچھلے تین چار سال سے ملک میں چل رہے ہندوتوا کو قبول نہیں کرتا ہوں۔ یہ ہندوتو کا ہمارا نظریہ نہیں ہے۔ ہماری خواتین آج غیر محفوظ ہیں اور آپ گایوں کی حفاظت کر رہے ہیں۔ ٹھاکرے نے کہا کہ آپ لوگوں کو ان کے کھانے کی ترجیحات کے لئے نشانہ نہیں بنا سکتے۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!