Published From Aurangabad & Buldhana

مغربی بنگال پنچایت الیکشن معاملہ میں ممتا کو سپریم کورٹ سے راحت

سپریم کورٹ نے مغربی بنگال پنچایت انتخابات میں آن لائن داخل کئے گئے کاغذات نامزدگی کو منظور کیے جانے کے کلکتہ ہائی کورٹ کے حکم کو جمعہ کے روز منسوخ کردیا۔

نئی دہلی : سپریم کورٹ نے مغربی بنگال پنچایت انتخابات میں آن لائن داخل کئے گئے کاغذات نامزدگی کو منظور کیے جانے کے کلکتہ ہائی کورٹ کے حکم کو جمعہ کے روز منسوخ کردیا۔

چیف جسٹس دیپک مشرا،جسٹس اے ایم کھانولکر اور جسٹس ڈی وائی چندر چوڑ کی ڈویژن بنچ نے کلکتہ ہائی کورٹ کے 8مئی کے اس حکم کو منسوخ کردیا ،جس میں اس نے کاغذات نامزدگی داخل کرنے کی آخری تاریخ سے پہلے ای میل اور وہاٹس ایپ کے ذریعہ داخل کیے گئے کاغذات نامزدگی کو منظور کرنے کا ریاستی انتخابی کمیشن کو حکم دیاتھا ۔

عدالت نے 20ہزار سے زیادہ ان پنچایت سیٹوں پر دوبارہ انتخابات کرانے سے بھی انکار کردیا ،جہاں بلامقابلہ الیکشن ہوئے ۔مغربی بنگال میں 14مئی کو پنچایت انتخابات ہوئے تھے۔عدالت عظمی نے 20ہزار سے زیادہ پنچایت سیٹوں پر ازسرنوانتخابات کرانے سے متعلق بھارتیہ جنتا پارٹی اور مارکسی کمیونسٹ پارٹی کی عرضیوں کو خارج کردیا۔ حالانکہ عدالت نے کہا کہ انتخابات سے متاثر امیدوار 30دن کے اندر الیکشن سے متعلق عرضی داخل کرسکتے ہیں۔

واضح رہے کہ گزشتہ مئی میں تشدد کی وجہ سے گاؤں پنچایت، ضلع کونسل اور پنچایت کمیٹیوں کی 58692سیٹوں میں سے 20ہزار سے زیادہ سیٹوں پر بلا مقابلہ انتخابات ہوئے تھے۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!