Published From Aurangabad & Buldhana

مارکرم کی سنچری کے باوجود جنوبی افریقہ کی شکست طے

اسٹارک نے 4 وکٹیں حاصل کی،آسٹریلیا فتح سے ایک وکٹ دور

ڈربن: ایڈن مارکرم کی بہترین اننگ کے باوجود جنوبی افریقہ کی شکست ٹل نہیں پائی ہے۔ 143 رنز بنا کر مارکرم کے آؤٹ ہوتے ہی اسٹارک نے ساؤتھ افریقہ کے آخری بلے بازوں کے وکٹ حاصل کر افریقہ کی مشکلیں بڑھا دی ہے۔تاہم اب آسٹریلیا کو پہلے ٹیسٹ میچ جیتنے کیلئے صرف ایک وکٹ کی ضرورت ہے۔جنوبی افریقہ نے 417 رن کے ہدف تعاقب کرتے ہوئے خراب روشنی کی وجہ سے چوتھے دن کے اختتام تک نو وکٹوں پر 293 رنز بنائے ہیں۔ جنوبی افریقی ٹیم اب بھی ہدف سے 124 رنز پیچھے ہے۔مارکرم نے 143 رنز اسکور کرکے ان کے پچھلے سب سے زیادہ اسکور کی برابری کی۔ انہوں نے تیسرے وکٹ کے لئیتھینس ڈی برون (36) کے ساتھ 87 رنز کی شراکت کر جنوبی افریقہ کو4وکٹ پر 49 رنز گنوانے کے بعد ٹیم کو سنبھالا۔اس کے بعد مارکرم اورڈی کاک (81) رن نے چھٹے وکٹ کے لئے 147 رنز کی شراکت داری کی اور جنوبی افریقہ کی امیدوں کو بڑھا دیا۔ ڈی کاک کے آؤٹ ہوتے وقت مورنے مورکل ان کا ساتھ دے رہے تھے۔آسٹریلیا نے اپنے کل کے اسکور 9وکٹ پر 213 رنز کو آج بڑھاتے ہوئے آسٹریلیا 227 رنز پر آل آؤٹ ہو گئی۔ اس طرح جنوبی افریقہ کے سامنے انہوں نے 417 کا ہدف رکھا۔مارکرم نے کریز پر کل 5 گھنٹے اور 40 منٹ گزارے۔انہوں نے اپنے کریئر کی تیسری سنچری اسکور کی، لیکن دن کے آخری وقت میں، مچل مارش نے مارکرم کو آؤٹ کیا۔مارکرم نے 218 گیندیں کھیلی اور 19 چوکے لگائے۔اس کے بعد، اسٹارک نے ایک اوور میں فیلینڈر (6)، کیشور مہاراج (0) اور رباڈا (0) کو پویلین بھیجا۔ا سٹارک آسٹریلیا کے سب سے زیادہ کامیاب گیند باز ر ہے۔ انہوں نے 74 رنز دیکر4 وکٹ حاصل کئے۔ اسٹار ک نے اپنی آخری دو گیندوں پر دو وکٹ حاصل کی ہیں اور انہیں کل صبح ہیٹ ٹرک مکمل کرنے کا ایک اہم موقع ملے گا۔آسٹریلیا کیلئے ہیزلوڈ نے 2 اور مچل مارش اور پیٹ کمنس نے1-1 وکٹ حاصل کی۔جنوبی افریقہ کا آغاز اچھا نہیں تھا۔ اس نے دوپہر کے کھانے سے پہلے چار وکٹ کھو دے ۔ ڈین ایلگر (9)،آملا (8)،ڈیویلئرس (0) اور کپتان ڈوپلیسس (4) دوہری ہندسوں تک پہنچنے میں ناکام رہے۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!