Published From Aurangabad & Buldhana

’لگتا ہے ملک میں ایمرجنسی کا اعلان ہونے والا ہے‘

اروندھتی رائے نے کہا، ’’موب لنچنگ کرنے والوں کی جگہ وکلاء، کویوں، لیکھاریوں، دلت حقوق کے لئے لڑنے والے کارکنان اور مفکروں کے گھر پر چھاپہ ماری ہو رہی ہے۔‘‘

معروف مصنفہ اروندھتی رائے نے سماجی کارکنان کی گرفتاریوں کی مذمت کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس صورت حال کو دیکھ کر محسوس ہوتا کہ ملک میں ایمرجنسی کا اعلان ہونے والا ہے۔ وہیں سینئر کمیونسٹ رہنما پرکاش کرات نے اس کارروائی کو جمہوری حقوق پر حملہ کے مترادف قرار دیا ہے۔

اروندھتی رائے نے کہا، ’’دن دہاڑے لوگوں کے قتل کرنے والوں اور موب لنچنگ کرنے والوں کی جگہ وکلاء، کویوں، لیکھاریوں، دلت حقوق کے لئے لڑنے والے کارکنان اور مفکروں کے گھر پر چھاپہ ماری ہو رہی ہے۔ یہ واضح کرتا ہے کہ ہندوستان کہاں جا رہا ہے۔ قاتلوں کا احترام کیا جا ئے گا اور جشن بھی منایا جائے گا۔ لیکن سماجی انصاف کے حق میں جو بولے گا اسے مجرم کہا جائے گا۔ ‘‘

اروندھتی نے مزید کہا، ’’یہ آئندہ انتخابات کی تیاری ہے۔ لیکن ہم ایسا ہونے نہیں دیں گے۔ ہمیں اس کے خلاف متحد ہونا ہوگا نہیں تو ہم ہر طرح کی آزادی کو کھو دیں گے۔ یہ بالکل ایمرجنسی جیسی صورت حال ہے۔

‘‘ادھر پرکاش کرات نے کہا، ’’یہ (گرفتاریاں) جمہوری حقوق پر حملہ کے مترادف ہیں۔ ہمارا مطالبہ ہے کہ ان لوگوں پر لگائے گئے تمام معاملات کو واپس لیا جائے اور انہیں جلد از جلد رہا کیا جائے۔‘‘

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!