Published From Aurangabad & Buldhana

قرض کے نمٹارے کیلئے لندن جانے سے قبل جیٹلی سے کی تھی ملاقات: مالیاء

بی جے پی کے دیگر لیڈرن سے بھی ملاقات کر کی تھی گذارش، جیٹلی نے کہا چلتے چلتے ملاقات پر نمٹارے کی کہی تھی بات

نئی دہلی:بنک گھوٹالہ میں ملک سے فرارشراب کے کاروباری اور بی جے پی کے راجیہ سبھا ایم پی وجے مالیا نے دعویٰ کیا ہے کہ ہندوستان چھوڑنے سے قبل انہوں نے وزیر مالیات ارون جیٹلی سے ملاقات کی تھی اور اپنے قرض کے نمٹارے سے متعلق بات کہی تھی۔ جبکہ جیٹلی نے پہلے اس طرح کی ملاقات سے انکار کیا اور بعد میں کہا کہ انہوں نے بطور ممبر پارلیمنٹ راجیہ سبھا چلتے چلتے ملاقات کر یہ بات کہی تھی۔

ملک سے فرار ہوکر وجئے مالیا فی الحال لندن میں مقیم ہیں۔ آج لندن کی عدالت میں انکی پیشی تھی جس سے قبل مالیا نے دھماکہ خیز انداز اختیار کرتے ہوئے کہا کہ 2016 میں ہندوستان چھوڑنے سے پہلے انہوں نے وزیر مالیات سے ملاقات کی تھی۔ وجے مالیا نے دعویٰ کیا کہ ’’ہندوستان چھوڑنے سے پہلے وزیر مالیات سے ملاقات کر میں نے معاملہ کا حل نکالنے کی تجویز رکھی تھی۔ اور بینکوں نے معاملہ نمٹانے کے لیے میرے خط پر اعتراض درج کرا دیا تھا۔‘‘ عدالت میں سماعت کے لیے جانے سے قبل مالیا نے کہا کہ ’’فریق مخالف نے مجھ پر جو الزامات عائد کیے ہیں، میں ان سے متفق نہیں ہوں۔ اس معاملے میں عدالت کو فیصلہ کرنے دیجیے۔‘‘

مالیا کے اس دعوے کو ارون جیٹلی نے ظاہری طور پر خارج کیا ہے۔ ایک بیان میں ارون جیٹلی نے کہا کہ وہ مالیا سے کبھی نہیں ملے۔ انھوں نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ ’’یہ بیان حقائق پر مبنی نہیں ہے اور جھوٹ ہے۔ 2014 کے بعد سے میں نے کبھی انھیں ملنے کا وقت نہیں دیا۔ ایسی صورت میں ان کی مجھ سے ملاقات کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔‘‘ لیکن ساتھ ہی انھوں نے یہ بھی کہا کہ ’’چونکہ وہ راجیہ سبھا کے رکن تھے اور کبھی کبھی ایوان میں آتے تھے تو انھوں نے اس موقع کا فائدہ اٹھایا اور ایک بار جب میں اپنے کمرے کی طرف جا رہا تھا تو ان سے میری ملاقات ہوئی تھی ‘ ‘۔ ارون جیٹلی نے مزید کہا کہ ’’وہ تیزی سے میری طرف آئے اور انھوں نے کہا کہ وہ سیٹلمنٹ کی تجویز لے کر آئے ہیں۔‘‘
وزیر مالیات نے اپنے بیان میں آگے لکھا کہ ’’میں ان کے ذریعہ قبل میں کیے گئے پیشکش سے واقف تھا، اس لیے میں نے انھیں نرمی کے ساتھ سمجھایا کہ مجھ سے بات کرنے سے کوئی فائدہ نہیں، انھیں جو بھی پیشکش دینی ہے وہ بینکوں کو دیں۔ انھوں نے کچھ کاغذات ہاتھ میں پکڑے ہوئے تھے، لیکن میں نے ان سے وہ کاغذات نہیں لیے۔‘‘ جیٹلی نے صفائی پیش کی ہے کہ ’’اس ایک ملاقات اور بات چیت کے علاوہ میں نے کبھی وجے مالیا کو ملنے کا وقت نہیں دیا‘‘۔

جیٹلی کی صفائی کے بعد جب لندن میں وجے مالیا سے یہ پوچھا گیا کہ کیا انھوں نے لندن روانہ ہونے سے پہلے بی جے پی کے کسی دیگر لیڈر سے بھی ملاقات کی تھی، تو انھوں نے کہا کہ ہندوستان چھوڑنے سے قبل پارلیمنٹ کے کئی اراکین سے بات کی اور یہ خواہش ظاہر کی کہ وہ بینک کے ساتھ سیٹلمنٹ کرنا چاہتے ہیں۔

مالیا اور جیٹلی کے بیان کے بعد کانگریس کے پی ایل پونیا نے میڈیا سے بات چیت کے دوران کہا کہ ہندوستان سے فرار ہونے سے دو روز قبل انھوں نے مالیا اور جیٹلی کو پارلیمنٹ کے سنٹرل ہال میں کافی دیر تک بات چیت کرتے ہوئے دیکھا تھا۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!