Published From Aurangabad & Buldhana

عوام نے آپکو تین طلاق قانون کے لئے نہیں بلکہ رام مندر کے لئے ووٹ دیا تھا: توگڑیا کا مودی کو پیغام

رام مندر کے لئے سپریم کورٹ کے بجائے حکومت کو خود پارلیمنٹ میں قانون پاس کرنا چاہیے

اورنگ آباد:۔ بی جے پی اور وزیر اعظم نریندر مودی پر حملہ کرتے ہوئے وشو ہندو پریشد کے عالمی صدر پروین توگڑیا نے جمعہ کو اپنی اورنگ آباد آمد پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ عوام نے بی جے پی کو حکومت رام مندر بنانے کے لئے دی تھی نہ کہ تین طلاق پر قانون بنانے کے لئے۔توگڑیا نے یہ بھی کہا کہ حکومت کو سیدھے پارلیمنٹ میں رام مندر کے لئے قانون پاس کردینا چاہیے۔
واضح رہے کہ توگڑیا اورنگ آباد اور پربھنی کے 2؍روزہ دورہ پر تھے۔ توگڑیا نے کہا کہ ’’ حکومت کو رام مندر کی تعمیر کے لئے فوراً قانون پاس کردینا چاہیے تاکہ اس پر جلد عمل کیا جاسکے۔ تین طلاق کا معاملہ ایک اضافی چیز ہے لیکن رام مندر اصل ترجیح ہونا چاہیے‘‘۔
توگڑیا نے مزید کہا کہ ہمیں عدلیہ پر پورا بھروسہ ہے، لیکن چونکہ اب تک مندر بن نہ سکا اس لئے قانون بنانے کی طرف بڑھنا چاہیے، اور سپریم کورٹ نے پھر ایک بار اس معاملہ کی سنوائی کو آگے بڑھا دیا ہے۔‘‘
سپریم کورٹ کی بینچ جس کی صدارت خود چیف جسٹس دیپک مشرا کررہے ہیں نے جمعہ کے روز بابری مسجد۔رام مندر کی سنوائی کو 14؍مارچ کے لئے آگے بڑھا دیا ہے۔
توگڑیا نے کہا کہ ایک لمبے عرصہ سے ہندو قوم مندر کی تعمیر کے انتظار میں ہے اس لئے اب اسے بنا دینا چاہیے۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!