Published From Aurangabad & Buldhana

طویل رخصت کے بعد کام پرنہ لوٹنے والے 13 ہزار ریلوے ملازمین کو برخاست کیا جائیگا

اورنگ آباد: ۱۰فروری(اسٹاف رپورٹر )ریلوے انتظامیہ نے اپنے تیرہ ہزارملازمین کو نوکریوں سے نکالنے کافیصلہ کیاہے۔اطلاعات کے مطابق یہ تمام ملازمین گزشتہ کچھ سالوں سے انتظامیہ کو کسی بھی طرح کی معلومات فراہم نہ کرتے ہوئے مسلسل رخصت پرہیں۔ یہی وجہ ہے کہ ایسے کام چور ملازمین کو نکال کران کی جگہ دوسرے ملازمین کے تقررات کافیصلہ انتظامیہ نے کیا۔ اس ضمن میں مرکزی ریل وزیر پیوش گوئل کے احکامات کاانتظارہے۔ بتایاگیاہے کہ ریلوے کے مختلف شعبہ جات میں کام کرنے والے کچھ ملازمین کی مسلسل غیرحاضری کے سبب کام کاج متاثرہورہے ہیں۔ ان ملازمین کونوٹس بھی ارسال کی گئی لیکن جواب نداردرہا۔ انتظامیہ نے اپنے ہرڈویژن کے ایسے ملازمین کی جانچ کرکے ان کی فہرست تیارکی ہے ۔ریلوے کے تیرہ لاکھ ملازمین میں سے تیرہ ہزارپانچ سوایسے ملازمین ہیں جنہوں نے اپنی طویل رخصت کاوقفہ ختم ہونے کے بعدبھی کام پر نہیں لوٹے ہیں۔ ریلوے قوانین کے تحت انہیں پہلے نوٹس ارسال کی جاتی ہے‘ تنخواہیں منہاکی جاتی ہیں‘ریلوے فی الحال افرادی قوت کی قلت کاشکارہے۔ ایسے میں ان ملازمین کی مسلسل غیرحاضری کے سبب انتظامیہ کومشکلات کاسامناکرناپڑرہاہے۔ پیوش گوئل سے اس ضمن میں مسافرین واعلیٰ افسران نے شکایات کی ہیں۔کئی ملازمین ایسے بھی ہیں جو کام پر حاضرنہ رہ کر مفت میں تنخواہیں حاصل کررہے ہیں‘ جس سے ریلوے کومعاشی خسارہ برداشت کرناپڑرہاہے۔ یہی وجہ ہیکہ انتظامیہ نے اب حتمی فیصلہ لیتے ہوئے ان تمام کام چور ملازمین کی چھٹی کرنے کافیصلہ کیاہے۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!