Published From Aurangabad & Buldhana

طلاق بل سے مسلم خواتین کا وقار بحال ہوگا :کووند

نئی دہلی: صدرِجمہوریہ رام ناتھ کووِند نے پارلیمنٹ کے بجٹ اِجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ مسلم خواتین کا وِقار برسوں تک سیاسی نفع نقصان کا یرغمال رہا ہے اور اُمید کی جاتی ہے کہ اُنہیں اِس سے نجات دِلانے کیلئے پارلیمنٹ میں پیش کیا گیا تین طلاق مخالف بل جلد ہی قانون کی شکل اِختیار کرلے گا۔ کووِند نے پارلیمنٹ کے بجٹ اِجلاس کے آغاز پر اپنی پہلی تقریر میں کہا کہ تین طلاق مخالف بل پاس ہونے کے بعد مسلم بہن بیٹیاں بھی عزتِ نفس کے ساتھ خوف سے آزاد زندگی گذار سکیں گی۔ اُنہوں نے کہا مسلم خواتین کا وِقار کئی دہائیوں تک سیاسی نفع نقصان کا یرغمال رہا ہے۔ اب ملک کو اُنہیں اِس صورتِ حال سے آزادی دِلانے کا موقع ملا ہے۔ میری حکومت نے تین طلاق کے سلسلے میں ایک بل پارلیمنٹ میں پیش کیا ہے میں امید کرتا ہوں کہ پارلیمنٹ جلد ہی اسے قانونی شکل دے گی۔ تین طلا ق پر قانون بننے کے بعد مسلم بہن بیٹیاں بھی عزت نفس کے ساتھ بے خوف زندگی جی سکیں گی۔انہوں نے کہا کہ حکومت خواتین کو بااختیار بنانے کی سمت میں کئی قدم اٹھارہی ہے۔ حکومت نے خواتین کے تنہا حج پر جانے پر عائد پابندی ختم کردی ہے اب 45 سال عمر سے زیاد ہ کی خواتین مرد رشتہ داروں کے بغیر حج پر جاسکتی ہیں۔دریں اثنا وزیر اعظم نریندر مودی نے اپوزیشن پارٹیوں سے آج سے شروع ہوئے پارلیمنٹ کے بجٹ سیشن میں تین طلاق بل منظور کرنے اور عام لوگوں، دلتوں، محروم طبقات کے مفاد میں بجٹ تیار کرنے میں تعاون دینے کی اپیل کی۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!