Published From Aurangabad & Buldhana

شیلا دکشت کے انتقال پر راہل گاندھی ،نریندر مودی،رام ناتھ کوونداور اروند کیجریوال نے ٹویٹ کر کیا غم کا اظہار

نئی دہلی :کانگریس کی سینئر لیڈر اور دہلی کی سابق وزیر اعلیٰ شیلا دیکشت نے 81 سال کی عمر میں دنیائے فانی کو الوداع کہہ دیا۔ انھوں نے طویل علالت کے بعد دہلی کے اسکارٹس اسپتال میں آخری سانس لی۔ ان کے انتقال کی خبر جیسے ہی پھیلی، صدر جمہوریہ اور وزیر اعظم سمیت ملک کی سرکردہ سیاسی ہستیوں کے اظہارِ غم کا سلسلہ شروع ہو گیا۔ سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ، کانگریس رکن پارلیمنٹ اور سابق کانگریس صدر راہل گاندھی، دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال، رکن پارلیمنٹ منوج واجپئی اور کئی دیگر بڑی ہستیوں نے ان کے انتقال کو عظیم خسارہ قرار دیا۔

1998 سے 2013 تک لگاتار 15 سال دہلی کی وزیر اعلیٰ رہی شیلا دیکشت کے انتقال کی خبر دیتے ہوئے اسکارٹس اسپتال کے ڈائریکٹر اشوک سیٹھ نے کہا کہ ’’ڈاکٹروں کی ایک ٹیم نے شیلا دیکشت کی اچھی طرح سے دیکھ بھال کی تھی۔ 3 بج کر 15 منٹ پر انھیں پھر سے دل کا دورہ پڑا۔ اس کے بعد انھیں ونٹلیٹر پر رکھا گیا تھا اور دوپہر 3.55 بجے ان کا انتقال ہو گیا۔‘‘

شیلا دیکشت کے انتقال پر کانگریس پارٹی نے ٹوئٹ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ ’’ہمیں شیلا دیکشت کے انتقال کے بارے میں سن کر دُکھ ہوا۔ انھوں نے تاحیات کانگریس کی رکن اور تین بار دہلی کے وزیر اعلیٰ کی شکل میں رہ کر دہلی کا چہرہ بدل دیا۔ ان کی فیملی اور دوستوں کے ساتھ ہماری ہمدردی ہے۔ اس تکلیف کے وقت میں انھیں صبر حاصل ہو۔‘‘


کانگریس رکن پارلیمنٹ اور پارٹی کے سابق صدر راہل گاندھی نے شیلا دیکشت کے ساتھ اپنے خاص تعلقات کا تذکرہ اپنے ٹوئٹ میں کیا اور کہا کہ وہ کانگریس کی ہونہار بیٹی تھیں۔ موت کی خبر ملنے کے بعد انھوں نے ٹوئٹ کرتے ہوئے لکھا کہ ’’شیلا دیکشت جی کے دنیا سے گزر جانے کی خبر سن کر میں حیران ہوں۔ وہ کانگریس کی معزز لیڈر تھیں۔ میری ان کے ساتھ ایک خاص بونڈنگ تھی۔ میری تعزیت ان کی فیملی اور دہلی کے عوام کے ساتھ ہے۔ شیلا جی نے دہلی کے لیے بے لوث خدمات انجام دیے۔‘‘


وزیر اعظم نریندر مودی نے شیلا دیکشت کے انتقال کی خبر پر ٹوئٹ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ ’’شیلا دیکشت جی کا اس دنیا سے جانا افسوسناک ہے۔ وہ ایک بہترین شخصیت کی مالک تھیں اور انھوں نے دہلی کی ترقی میں قابل قدر کردار نبھایا۔ میری تعزیت ان کی فیملی اور احباب کے ساتھ ہیں۔ اوم شانتی۔‘‘


صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند نے ہردلعزیز لیڈر شیلا دیکشت کےا نتقال پر افسوس ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ’’دہلی کی سابق وزیر اعلیٰ اور ایک سینئر سیاسی لیڈر شریمتی شیلا دیکشت کے انتقال کے بارے میں جان کر افسوس ہوا۔ ان کا دور اقتدار راجدھانی دہلی کے لیے انتہائی اہم تبدیلیوں کا دور تھا، جس کے لیے انھیں یاد کیا جائے گا۔ ان کی فیملی اور معاونین کے تئیں میری ہمدردی ہے۔‘‘


دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نے بھی شیلا دیکشت کے موت کی خبر کو اندوہناک قرار دیا۔ انھوں نے ٹوئٹ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ ’’ابھی ابھی محترمہ شیلا دیکشت جی کے انتقال کی دردناک خبر سننے کو ملی۔ یہ دہلی کے لیے بہت بڑا خسارہ ہے اور انھوں نے دہلی کو جو کچھ بھی دیا وہ ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔ میں ان کی روح کو سکون کے لیے دعا گو ہوں اور ان کے فیملی ممبر کی تکلیف میں ان کے ساتھ کھڑا ہوں۔‘‘

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!