Published From Aurangabad & Buldhana

شری شری روی شنکر کے اجودھیا فارمولہ کو مسلم پرسنل لا بورڈ نے کیا خارج ، کہی یہ بات ؟

نئی دہلی : آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ نے شری شری روی شنکر کے اجودھیا فارمولہ کو خارج کردیا ہے ۔ بورڈ کا کہنا ہے کہ شری شری ملک میں نفرت اور پرتشدد حملوں کو پھیلا رہے ہیں ۔ غور طلب ہے کہ شری شری روی شنکر نے ایک کھلا خط لکھ کر کہا تھا کہ مسلمانوں کو بابری مسجد کی متنازع اراضی پر اپنا حق چھوڑ دینا چاہئے ، جس کے بدلے میں مسلم اراضی پر ہندو اپنا حق مانگنا چھوڑ دیں گے۔
انہوں نے یہ بھی کہا تھا کہ اگر سپریم کورٹ کا فیصلہ مسلمانوں کے حق میں آتا ہے تو ملک میں پرتشدد بغاوت ٹالنی مشکل ہوجائے گی۔ بورڈ نے اس خط کے جواب میں کہا ہے کہ تجویز انصاف کے خلاف ہے ۔ اگر شری شری کوئی قابل غور تجویز لے کر آتے ، تو بورڈ ان کی تجویز کے بارے میں غور کرتا ۔

بورڈ سپریم کورٹ کے ہر فیصلہ کو تسلیم کرنے کیلئے تیار ہے خواہ فیصلہ ان کے خلاف ہی کیوں نہ آئے۔ ساتھ ہی ساتھ بورڈ نے شری شری سے اپیل کی ہے کہ وہ سپریم کورٹ کے فیصلہ کا احترم کریں اگر وہ ہندوستان کے آئین میں یقین رکھتے ہیں ۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!