Published From Aurangabad & Buldhana

سیدمتین کوزدوکوب کرنیوالے بی جے پی کے ڈپٹی مئیر اوتاڑے سمیت پانچ کارپوریٹرس کی گرفتاری کاناٹک

ہنستے کھیلتے بے شرمی کامظاہرہ کرتے کارپوریٹرس پولس اسٹیشن پہنچے ایک گھنٹے بعدپولس نے پانچوں کو ضمانت پررہاکردیا

اورنگ آباد: ۲۰؍ اگست(اسٹاف رپورٹر )سابق وزیراعظم اٹل بہاری واجپائی کوخراج عقیدت پیش کرنے کی مخالفت کرنے والے مجلسی کارپوریٹر سیدمتین کوزدوکوب کرنے والے کارپوریٹر مادھوی ادونت ‘ڈپٹی مےئر وجئے اوتاڑے سمیت دیگرتین کارپوریٹرس کو سٹی چوک پولس نے حراست میں لے کر انہیں ایک گھنٹہ میں چھوڑدیا۔ آج صبح مجلسی رکن اسمبلی سید امتیاز جلیل نے ان کارپوریٹرس کوحراست نہ لینے پر ملامت کی تھی جس کے بعد آنافانا پی آئی داداراؤ شنگارے اوران کی ٹیم نے وجئے اوتاڑے‘ مادھوی ادونت‘ گروپ لیڈر پرمود راٹھوڑ‘ کارپوریٹر راج گورو وانکھیڑے اوررامیشوربھادوے کو حراست میں لیاتھا۔اس کے بعدانہیں سٹی چوک پولس اسٹیشن لایاگیا اور کاغذی کاروائی کرکے گرفتاری کی نوٹنکی پوری کی اور انہیں چھوڑدیا۔

پانچوں بی جے پی کارپوریٹرس ہنستے مسکراتے بے شرمی کامظاہرہ کرتے ہوئے پولس اسٹیشن پہنچے وہاں پولس ملازمین نے ان کی بہتر خاطر تواضع کی اوراسی طرح کے خوشگوار ماحول میں انہیں چھوڑدیا۔ اس سے واضح ہوتاہے کہ سیدمتین کی میٹنگ میں ماب لنچنگ کرنے والے کارپوریٹرس کو محض خانہ پری اوردکھاوے کے لئے حراست میں لیاتھا۔ پولس کامقصدان حملہ آورکارپوریٹرس کے خلاف ٹھوس کاروائی نہیں تھا۔ ۱۷

؍اگست کو منعقدہ میٹنگ میں سابق وزیراعظم اٹل بہاری واجپائی کو خراج عقیدت پیش کرنے کی تجویز پیش کی جس کی مخالفت سیدمتین نے کی۔ اس بات پر بی جے پی کارپوریٹرس نے بے رحمی سے سیدمتین کوزدوکوب کیاتھا۔ یہ واقعہ ملک گیر سطح پر ٹی وی چینلوں کی رونق بنا تھا۔ مجلس کاوفد پولس کمشنر چرنجیوپرسادسے ملا تھا اور مطالباتی محضر پیش کرکے ان کے خلاف کاروائی کا مطالبہ کیا تھا۔ جانبین نے سٹی چوک پولس اسٹیشن میں شکایت درج کروائی تھی۔ وجئے اوتاڑے نے سیدمتین کے خلاف جوشکایت درج کی تھی اس کے بعدانہیں پولس نے اسپتال سے ہی حراست میں لے لیا تھا۔

عدالت نے انہیں ایک روزہ پی سی آردیا۔ دوسری جانب سید متین کی شکایت پر وجئے اوتاڑے ودیگر پانچ کارپوریٹرس پر معاملہ درج کیا گیا۔ دوپہر ساڑھے چاربجے کے درمیان پولس نے اوتاڑے کواس کے رابطہ دفترسے گرفتارکیا جبکہ بقیہ کوان کے مکانات ودفاترسے گرفتارکیا۔ ان کی گرفتاری کے بعدریاستی خواتین کمیشن کی چےئرمین وجیہ راہٹکر‘ نائب صدرڈاکٹربھاگوت کراڑ‘ شہر صدر کشن چند تنوانی‘ رکن اسمبلی اتول ساوے ’اوردیگر قائدین سٹی چوک پولس اسٹیشن پہنچے۔ اس ضمن میں پولس نے بتایاکہ پانچوں کوضمانت پررہاکیاگیاہے۔لیکن اس معاملہ سے یہ واضح ہوتاہے کہ پولس نے مارپیٹ کرنے والوں کے ساتھ نرمی کامظاہرہ کیاہے وہیں دستور کے حق کا استعمال کرنے والے سیدمتین پرزیادتی کی۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!