Published From Aurangabad & Buldhana

سچن تیندولکر نے آسٹریلیا کی اسپورٹس کمپنی پر کیا کیس ، مانگی 20 لاکھ ڈالر کی رائلٹی

سڈنی: ہندستانی آئکن کرکٹر سچن تندولکر نے آسٹریلیائی بیٹ بنانے والی کمپنی اسپارٹن اسپورٹس پر 20 لاکھ ڈالر کی رائلٹی ادا نہ کرنے کے خلاف مقدمہ درج کرایا ہے۔ سچن نے کمپنی پر ان کے نام کا استعمال کرتے ہوئے اپنے پروڈكٹس فروخت کرنے کا الزام لگایا اور انہیں رائلٹی نہیں دینے کے خلاف فیڈرل سرکٹ عدالت میں مقدمہ درج کرایا ہے۔ سچن کی تصویر والا لوگو کمپنی کے کپڑے اور بیٹ میں لگا ہوا ہے۔
میڈیا رپورٹ کے مطابق سچن کے وکیل نے دعوی کیا ہے کہ کمپنی کو سچن کو رائلٹی کے طور پر 20 لاکھ ڈالر دینے ہیں جو انہوں نے ابھی تک نہیں دیئے ہیں۔ سچن کمپنی کے کئی پروموشنل ایونٹ میں شامل ہوئے تھے اور اس کے علاوہ وہ جولائی 2016 میں لندن میں ہوئی پریس کانفرنس میں شامل ہوئے تھے۔ سچن نے جنوری 2017 میں ممبئی میں بھی کمپنی کے ایک ایونٹ میں شرکت کی تھی۔
وکیل کے مطابق سچن نے اسپارٹن کے ساتھ گزشتہ سال ستمبر میں اپنا معاہدہ ختم کر لیا تھا اور ان کے نام کا استعمال نہ کرنے کے لئے کہا تھا۔ لیکن کمپنی مسلسل سچن کے نام پر اپنے سامان فروخت کر رہی ہے اور اشتہارات میں ان کے نام اور تصویر بھی استعمال کر رہی ہے۔
سچن نے کمپنی سے انہیں رائلٹی دینے اور ان کا نام استعمال نہ کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ اس کے علاوہ انہوں نے عدالت سے ان کی تصویر اور نام سے بنا سامان کو ضائع کرنے کی بھی مانگ کی ہے۔ معاملے کی سماعت 26 جون سے سڈنی میں شروع ہو گی۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!