Published From Aurangabad & Buldhana

سوامی اگنی ویش پھر ایک بار موب لنچنگ کا شکار

نئی دہلی میں واجپئی کی آخری رسومات میں خراج عقیدت پیش کرنے جا تے وقت پیش آیا واقعہ

نئی دہلی:۔ سماجی کارکن اور آریہ سماج کے رہنماء سوامی اگنی ویش کو آج پھر ایک مرتبہ دہلی کے دین دیال اوپادھیائے مارگ پر بھیڑ نے حملہ کردیا۔ اگنی ویش سابق وزیر اعظم اٹل بہاری واجپئی کی آخری رسومات میں خراج عقیدت پیش کرنے جارہے تھے۔

واقعہ سے متعلق سامنے آئے ویڈیو میں سڑک پر لوگوں کے ایک گروہ کو اگنی ویش کا پیچھا کرتے ہوئے دیکھا جاسکتا ہے۔ ایک موقع پر انہیں دھکا دیا گیا اور پھر اس ویڈیومیں ایک خاتون کو اگنی ویش کو مارنے کے چپل اٹھائے بھی دیکھا جاسکتا ہے۔

موب لنچنگ کا یہ واقعہ اگنی ویش پر بھیڑ کے حملہ کے ٹھیک ایک ماہ بعد دوبارہ پیش آیا ہے جب جھارکھنڈ میں بھارتیہ جنتا یوا مورچہ کے کارکنان نے حملہ کیا تھا۔یہاں وہ پہاریہ قبیلے کی جانب سے لٹی پارا اسٹیڈیم میں منعقدہ پروگرام میں شرکت کے لئے گئے تھے۔ایک ماہ قبل جھارکھنڈ کے اس حملہ کو اگنی ویش نے ریاستی حکومت کی جانب سے کرایا گیا حملہ قرار دیا تھا۔یوا مورچہ کے ذمہ داران نے اس موقع پر کہا تھا کہ ہمیں صرف اگنی ویش کے خلاف احتجاج کرنا تھا اور وہاں پر ہوئے تشدد میں ہمارے ارکان نہیں شامل تھے۔ حادثہ کے بعد اگنی ویش نے کہا تھا کہ انہیں اطلاع دی گئی تھی کہ یوا مورچہ اور ABVPکے کارکنان انکے خلاف احتجاج کررہے ہیں تو انہوں نے احتجاج کررہے لوگوں سے کہا تھا کہ وہ آئے اور اپنے اعتراضات بتائیں لیکن انکے مطابق کوئی بھی ان سے بات کرنے نہیں آیا تھا۔ یوا مورچہ کے ریاستی صدر امیت سنگھ نے میڈیا سے بتایا تھاکہ ’’ یہ بات صحیح ہے کہ یوا مورچہ کے کارکنان کی جانب سے وہاں احتجاج کیا جانا طئے تھا اس لئے کہ ہم انکے خیالات سے واقف ہیں اور ہم انہیں نکسل وادیوں کی حمایت میں پاتے ہیں۔ میں نے حملہ کا ویڈیو دیکھا ہے، ہمارے کارکنان صرف نعرہ لگا رہے تھے۔ وہ حملہ کا حصہ نہیں تھے‘‘۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!