Published From Aurangabad & Buldhana

سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کےدورہ کے خلاف برطانیہ میں اپوزیشن اور انسانی حقوق کارکنوں کا شدید احتجاج

سعودی ولی عہد نے ملکہ برطانیہ اوروزیراعظم سے ملاقات کی۔ سعودی عرب نے برطانیہ کو براہ راست سرمایہ کاری کا یقین دلایا ہے، دونوں ممالک میں سرمایہ کاری اور تجارت 90 ارب ڈالرز تک لےجانے پر اتفاق ہوا ہے۔ ادھر برطانوی اپوزیشن اور انسانی حقوق کےکارکنوں کی جانب سے محمد بن سلمان کی برطانیہ آمد پر شدید احتجاج کیا گیا۔

محمد بن سلمان سرمایہ کاری کی نوید لیے لندن پہنچے ہیں،10 ڈاؤننگ اسٹریٹ میں وزیراعظم ٹریسا مئے سے ملاقات کے بعد وفد کی سطح پر مذاکرات ہوئے، جس میں برطانیہ میں براہ راست سرمایہ کاری اور برطانوی کمپنیوںکو نیا بزنس ملنے کی باتیں ہوئیں۔

ٹریسا مئے کے دفتر سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ سعودیہ سے تعلقات یوروپی یونین سے علیحدگی کے دور میں برطانوی معیشت کو مضبوطی فراہم کریں گے۔

محمد بن سلمان نے بکنگھم پیلس میں ملکہ برطانیہ سے بھی ملاقات کی۔ دن کا کھانا ملکہ اور رات کا شہزادہ چارلز اور ولیم کے ساتھ رکھا گیا۔

پارلیمنٹ میں ٹریسا مئے اور اپوزیشن لیڈر جیریمی کوربن میں سعودی ولی کے دورے کو لے کر شدید بحث ہوئی۔

ٹریسا مئے نے انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا معاملہ ولی عہد کے ساتھ اٹھانےکا یقین دلایا۔


برطانوی وزیراعظم کی رہائش گاہ کے باہر بھی مظاہرہ کیا گیا

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!