Published From Aurangabad & Buldhana

سشما سوراج بیرون ممالک میں پھنسے بھارتیوں کے لئے مسیحا تھیں: شمس الضحی خان

آنند نگر/ مہراج گنج: سابق وزیر خارجہ سشما سوراج موجودہ بی جے پی میں وہ واحد لیڈر تھیں جن کا یہ دل احترام کرتا تھا کانگریس کے پچھلے دس سالہ دور اقتدار میں سشماسوراج جی بطور حزب اختلاف بی جے پی کی واحد پارلیمانی ممبر تھیں جو پارلیمنٹ میں ہر مدعے پر کھل کر بڑی مضبوطی سے اپنی بات رکھتی تھیں، اب تو بی جے پی میں بے شمار زبانیں ہیں لیکن اس وقت ان کے علاوہ کوئی اور مضبوط و مستحکم زبان نظر نہیں آتی تھی۔ بی جے پی کے برے دن کی نَیّیا پار لگانے والی جب وہ تھیں تو اچھے دن آنے کے بعد سب بڑی اور اونچی کرسی کی حقدار بھی وہی تھیں لیکن یہ اور بات ہے کہ اچھے دن آنے کے بعد دولہا کوئی اور بن گیا اور انھیں وزیر خارجہ کے عہدے پر اکتفا کرنا پڑا۔

مذکورہ باتوں کا اظہار خیال حافظ شجاعت فیض عام چیریٹیبل ٹرسٹ کے چیف شمس الضحی خان نے کی انھوں نے مزید کہا کہ ہر مسئلے ہر مدعے پر بے باکی سے بولنے والی اس لیڈی کا جب چہکنے کا وقت آیا تو نہ جانے کیوں خاموش ہوگئ اور پچھلے پانچ سالہ بی جے پی کے دور اقتدار میں خاموشی سے بطور وزیر خارجہ بغیر کسی چوں چراں کے بے زبان ہو کر اپنے عہدے اور منصب کا احترام کرتے ہوئے کسی خاص طبقے کی وزیر خارجہ بن کر نہیں بلکہ اس ملک ہندوستان کی وزیر خارجہ بن کر بہتر اور تسلی بخش خدمات سر انجام دیا۔ بیرون ممالک میں پھنسے بھارتیوں کے لئے مسیحا تھیں۔ ہم انکے اس کام اور انکی شخصیت کو ہمیشہ خوبصورت لفظوں میں یاد رکھیں گے۔ اس موقع جنرل سکریٹری حافظ شمس الہدی قاسمی، جنرل سپروائز حافظ عبید الرحمن الحسینی، سکریٹری محمد ساجد حلیمی، محمد شاہد خان، حافظ محمد اشرف، محمد جعفر خان، رفیع اللہ لاری، شمشاد احمد، سابق پردھان شفیق احمد کے علاوہ متعدد سماجی و سیاسی شخصیات نے بھی انھیں یاد کیا۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!