Published From Aurangabad & Buldhana

سر کاری زمین پر ناجائز قبضہ کے الزام میں انتظامیہ نے اعظم خان کے ریزورٹ کی دیوار منہدم کی

رامپور : رامپور سے سماج وادی پارٹی کے رہنما اعظم خان کے غیر قانونی تعمیر پر پولیس نے چوٹ کر دی ہے۔ جمعہ کو اعظم خاں کے رامپور واقع ہمسفر ریزورٹ کے غیر قانونی مقبوضہ حصہ کو توڑا گیا۔ اعظم خان نے ریزورٹ کے لئے ایک ہزار میٹر غیر قانونی قبضہ کیا تھا، جسے دوجے سی بی اور بلڈوزر سے زمین دوز کر دیا گیا۔

بتا دیں کہ سماج وادی پارٹی کے دور حکومت میں اعظم خاں نے اس عیش و آرام کی ہمسفر ریزورٹ کو بنوایا تھا۔ کروڑوں کی لاگت سے بنے اس حربے کا معنون سابق وزیر اعلی ملائم سنگھ یادو نے کیا تھا۔ جمعہ کو انتظامیہ نے کارروائی کرتے ہوئے ریزورٹ کے غیر قانونی حصے کو گرایا۔

اس سے پہلے اعظم خاں کی یونیورسٹی محمد علی جوہر یونیورسٹی تنازعات میں گھری ہوئی تھی۔ اعظم خاں پر کسانوں کی زمین پر غیر قانونی قبضہ کرکے یونیورسٹی بنانے کا بھی الزام ہے۔ دراصل سماج وادی پارٹی کے ایم پی اعظم خاں نے اتر پردیش پولیس کے ذریعے گزشتہ تین ماہ میں ان کے خلاف درجنوں کیس دائر کئے ہیں۔وہیں ای ڈی ED نے بھی اعظم خاں پر کارروائی کی تھی۔ ای ڈی نے اعظم خاں پر اب منی لانڈرنگ PMLA کے تحت مقدمہ درج کیا ہے۔

وہیں اعظم خاں رامپور میں سوا ماہ سے نہیں آئے ہیں۔ عیدبقرعید پر بھی وہ اپنے پارلیمانی حلقہ نہیں پہنچے۔ انہوں نے رام پورواسيوں کو خط لکھ کر اپنا درد بیان کیا ہے۔ اپنے خط میں انہوں نے جوہر یونیورسٹی کے اسٹوڈنٹس کے لئے بھی باتیں لکھی ہیں۔اعظم کا یہ خط سوشل میڈیا پر کافی وائرل ہوا۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!