Published From Aurangabad & Buldhana

سرحدوں کی حفاظت میں مودی سرکارناکام

نئی دہلی: یو پی اے حکومت میں وزیر خزانہ رہے اور سینئر کانگریس لیڈر پی چدمبرم نے جموں و کشمیر کے مسئلے پر مودی حکومت کے رخ پرسوال اٹھایا ہے۔چدمبرم نے کشمیر میں سخت فوجی کارروائی کے بعد بھی حالات بہتر نہ ہونے پر مودی حکومت پر حملہ بولا ہے۔ کانگریس لیڈر نے نئے سال سے پہلے پلوامہ میں سی آر پی ایف کیمپ پر دہشت گردانہ حملے کا حوالہ دیتے ہوئے کہاکہ وقتا فوقتا ہمیں بڑی بے رحمی سے یہ یاد دلایا جاتا ہے کہ جموں و کشمیر ریاست سے بھی منسلک ایک مسئلہ ہے۔چدمبرم نے ٹویٹ کیاکہ اس طرح کا واقعہ 30 تا 31 دسمبر 2017 کی رات کو ہوا، جب دہشت گردوں نے پلوامہ ضلع کے لیتھپورا واقع سی آر پی ایف تربیتی مرکز پر حملہ کیا، جس میں سی آر پی ایف کے پانچ جوان شہید ہوئے اور تین زخمی ہو گئے۔گجرات انتخابات سے پہلے حکومت نے دنیشور شرما کو جموں و کشمیر کا خصوصی نمائندے مقرر کیا، لیکن یہ واضح نہیں کیا گیا کہ ان سے کیا کرنے کوکہاگیا ہے۔کانگریس لیڈر کے مطابق اس کے بعد یہ بتایا گیا کہ دنیشور شرما ان سبھی سے بات چیت کیلئے تیار ہیں جو ان سے ملنے کے خواہاں ہیں۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!