Published From Aurangabad & Buldhana

سابق آئی ایس آئی چیف اسد درانی کے انکشاف سے گھبرایا پاک ، دئے جانچ کے احکام

پاکستانی فوج خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی کے سابق چیئرمین اسد درانی کے انکشاف پر پیر کوکورٹ آف انکوائری کے احکام دئے ہیں۔فوج نے حکومت سے درانی کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کو کہا ہے۔تاکہ انہیں ملک چھوڑنے سے روکا جا سکے۔درانی نے اگست 1990 سے مارچ کے درمیان اؤئی ایس آئی کی قیادت کی تھی۔درانی نے ہندستانی خفیہ ایجنسی را کے کے سابق چیئرمین اے ایس دلت کے ساتھ مل کر “دا اسپائی کرانیکلس را،آئی ایس آئی اینڈ الیوجن آف پیس ‘نام کی ایک کتاب لکھی ہے۔اس کتاب کوکچھ دنوں پہلے ہی ہندستان میں جاری کیا گیا ہے۔

پاکستانی فوج کے میڈیا ڈویژن ۔انٹر سروسز پبلک رلیشنس (آّئی ایس پی آر ) کی جانب سے ایک بیان کے مطابق درانی کو پیرکو ان کی کتاب کو لیکر ان کارخ جاننے کے بارے میں جی ایچ کیو طلب کیا گیا تھا۔

بیا ن میں کہا گیا ،ـسیوارت لیفٹیننٹ جنرل کی قیادت میں ایک رسمی عدالت آف انکوائری کا حکم دیا گیا ہے تاکہ معاملے کی تفصیل سے جانچ ہو سکے”۔اس میں یہ بھی کہا گیا ،”باصلاحیت اتھارتی سے رابطہ کیا گیا تاکہ لیفٹیننٹ جنرل درانی کو ای سی ایل فہرست میں ڈالا جا سکے”۔

درانی نے اپنی اس کتاب کولیکر ان کے "اپنے ہی لوگوں پر نشانہ کا اظہار کیا ہے۔یہ کتاب تنازع میں آنے کے ساتھ ہی فوج کے کچھ ریٹائرڈ سینئر حکام نے مختلف ٹی وی پروگراموں میں درانی پر حملہ کہا ہے۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!