Published From Aurangabad & Buldhana

روہیوکے تحت3000کنوؤں کی تعمیر کافنڈ اب تک موصول نہیں ہوا

ضلع پریشدCEOاندورن دوماہ ان کیمرہ بیان لے کررپورٹ پیش کریں‘کھیرے

اورنگ آباد: ۲۶؍دسمبر (اسٹاف رپورٹر )مہاتما گاندھی نیشنل رورل روزگار ہمی یوجنا اسکیم کے تحت ضلع میں کنوؤں کے کام کیے گئے لیکن اس کی مزدوری اب تک کسانوں کوموصول نہیں ہوئی ہے ۔ضلع میں تین ہزارکسانوں نے اپنے کھیتوں میں اسکیم کے تحت کنویں بنائے ہیں۔لیکن اب تک انہیں اس کافنڈ موصول نہیں ہوا ہے۔اسطرح کاسوال رکن اسمبلی پرشانت بمب نے آج کلکٹردفترمیں منعقدہ دشا کمیٹی کی میٹنگ میں اٹھایااور متعلقہ افسران وعہدیداران پرناراضگی کااظہارکیا۔اس موقع پر دوماہ میں ہر استفادہ کنندہ کاان کیمرہ سروے کررپورٹ پیش کرنے کے احکامات کمیٹی کے صدر رکن پارلیمنٹ چندرکانت کھیرے نے دیے۔تین ہزارکنوؤں کیلئے 38.67کروڑ کافنڈ درکارہے ۔جس میں سے صرف 1.12کروڑ کافنڈ موصول ہواہے ۔اس موقع پر موجودکسانوں نے بھی اس مسئلہ پرنمائندگی کی۔انہوں نے کہاکہ ہم نے قرض لے کر کنویں تعمیرکیے ہیں لیکن اب تک ہمیں فنڈ موصول نہیں ہواہے ۔گنگاپورتعلقہ کے دھاموری دیہات کے کسانوں نے پنچایت سمیتی کے روبرو اس موضوع پر احتجاجی ہڑتال بھی کی۔لیکن نو کنوؤں کا آٹھ لاکھ بجٹ اب تک نہیں دیاگیا۔بمب نے کسانوں سے کہاکہ کنویں کے فنڈ دینے کیلئے جن افسران نے رشوت طلب کی ہے ان کے نام ظاہرکریں۔انہوں نے کہاکہ جوافسررشوت مانگ رہاہے اس کے نام کسان بتادیں میں تمہیں بجٹ فراہم کردوں گا۔کسانوں نے جواب میں کہاکہ پہلے ہمیں بجٹ فراہم کریں ‘افسران کے نام پر سیاست نہ کریں۔کرشناپاٹل ڈونگاؤنکر نے پریشان حال کسانوں کے مسائل صدر کھیرے کے سامنے پیش کیے۔ضلع کلکٹردفترمیں منعقدہ دشا کمیٹی کی میٹنگ کھیرے کی صدارت میں آج منعقدکی گئی۔اس موقع پر رکن اسمبلی پرشانت بمب‘امتیازجلیل‘سندیپان بھومبرے‘اتول ساوے‘ مےئر نندکمار گھوڑیلے‘ضلع پریشد صدر دیویانی ڈونگاؤنکر‘کلکٹر نول کشوررام‘ضلع پریشد سی ای او مدھوکر اردڑ‘ ایڈیشنل کلکٹرپی ایل سورمارے‘ایڈیشنل سی ای او اشوک شرسے‘ ڈپٹی کلکٹر پرشانت شیلکے ‘ڈسٹرکٹ پلاننگ آفیسر وجئیپوار‘ کرشناپاٹل ڈونگاؤنکرکے علاوہ ضلع پریشد‘پنچایت سمیتی چےئرمین‘افسران وعہدیداران موجودتھے۔اس میٹنگ میں مرکزی وریاستی حکومتوں کی اسکیمات کاجائزہ لیاگیا۔بمب نے میٹنگ میں کنوؤں کی تعمیر پر بحث کی۔افسران کو کسانوں کوفنڈ تقسیم کرنے کیلئے کتنا بجٹ درکارہے؟ کتنے کنوؤں کاکام مکمل ہوا؟فنڈ موصول نہ ہونے کی وجہ کیاہے؟اسطرح کے تیکھے سوالات انہو ں نے افسران سے کیے۔افسران نے کہاکہ اس ضمن میں کئی شکایات موصول ہوئی تھیں‘بڑے پیمانے پر مسٹر پرنہیں کیے گئے‘لیکن کتنی شکایات موصول ہوئیں اسکاجواب افسران نہیں دے سکے۔افسران نے کہاکہ گزشتہ ہفتہ ایک کروڑ بارہ لاکھ کافنڈ موصول ہواتھا۔اس ضمن میں صدر کھیرے نے ان کیمرہ بیانات لے کر رپورٹ پیش کرنے کے احکامات ضلع پریشد سی ای اوکودیے۔38کروڑفنڈ مزیددرکارہے ۔اورنگ آبادتعلقہ کو59پٹن534کنڑ154خلدآباد7سوئیگاؤں200پھلمبری456سلوڑ667کنویں تعمیرکیے گئے۔ اسکے لئے اڑتیس کروڑ فنڈ کی ضرورت ہے ۔صرف ایک کروڑبارہ لاکھ کافنڈ موصول ہواہے ۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!