Published From Aurangabad & Buldhana

رافیل پر نریندرمودی خود جواب دیں: شیو سینا

شیو سینا کے سینئر رہنما سنجے راؤت نے رافیل سودے کو لے کر مرکز کی مودی حکومت پر بڑا حملہ بولا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ وزیر اعظم کو رافیل پر اپنی خاموشی توڑنی چاہیے۔

رافیل معاملہ مودی کی قیادت والی بی جے پی حکومت کے لئے پریشانی کا بڑا سبب بنتا جا رہا ہے ۔ کانگریس صدر راہل گاندھی کے وزیر اعظم پر کئے گئے سیدھے حملے کے بعد اب بی جے پی کی اتحادی جماعت شیو سینا کے سینئر رہنما سنجے راؤت نے وزیر اعظم نریندر مودی سے کہا ہے کہ وہ رافیل معاملہ پر اپنی خاموشی توڑیں۔

سنجےراؤت نے کہا کہ رافیل ایشوہے اور فرانس کے سابق صدر اولاند نے بھی کہا ہے اور ان کی بات کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا کیونکہ یہ معاہدہ اولاند کے دور اقتدار کا ہی ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ’’ رافیل ایشو پر جواب دینے کی ذمہ داری وزیر اعظم کی ہے ۔ کانگریس صدر راہل گاندھی کہہ رہے ہیں اس سے ہمیں کوئی مطلب نہیں ،لیکن ملک کو سچ کا پتہ چلنا چاہیے ۔ رافیل ایشو پر بی جے پی کے کسی ترجمان کو نہیں بلکہ خود وزیر اعظم نریندر مودی کو سامنے آنا چاہیے اور جواب دینا چاہیے‘‘۔

رافیل معاملہ پر جو ہنگامہ چل رہا ہے اس کی روشنی میں سنجے راؤ ت کا بیان کافی اہمیت کا حامل ہے اور ان کے بیان سے حزب اختلاف کے الزامات کو مزید تقویت ملتی ہے ۔ واضح رہے کل فرانس کے نیوز پورٹل ’میڈیا پارٹ‘ نے خبر شائع کی تھی جس میں اس نے دسالٹ ایوی ایشن کے دستاویزات کے حوالہ سے کہا تھا کہ دسالٹ کے پاس انل امبانی کی کمپنی ریلائنس ڈیفینس کو اپنا پارٹنر بنانے کے علاوہ کوئی راستہ نہیں تھا کیونکہ دستاویزات کے مطابق دسالٹ کے لئے یہ لازمی اور ضروری تھا ۔ میڈیا پارٹ کے اس انکشاف کے بعد کانگریس صدر راہل گاندھی نے وزیر اعظم کو بدعنوان اور انل امبانی کا چوکیدار کہا ہے۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!