Published From Aurangabad & Buldhana

دابھولکر پر دوسری گولی کالسکر نے چلائی تھی : سی بی آئی

ہتھیار استعمال کرنے اور بم بنانے میں ماہر تھا اورنگ آباد کا کالسکر

اورنگ آباد:- اورنگ آباد کا شرد کالسکر ان دو لوگوں میں شامل تھا جنہوں نے ڈاکٹر نریندر دابھولکر کو اگست 2013 گولی مار کر قتل کیا تھا۔ اسطرح کی معلومات سینٹرل بیورو آف انویسٹیگیشن (CBI) نے پونے کورٹ میں دی۔
واضح ہوکہ پونہ عدالت نے 10 ستمبر تک کالسکر کو سی بی آئی کی تحویل میں دے دیا تھا۔ جبکہ اورنگ آباد ہی سے گرفتار دوسرا گولی لانے والا سچن آندورے کو عدالتی تحویل میں روانہ کردیا ہے۔
سی بی آئی عدالت میں یہ بھی بتایا کہ کالسکر ہتھیار استعمال کرنے اور بم بنانے کا ماہر تھا۔ سی بی آئی وکیل وجئے کمار ڈھاکنے نے عدالت میں کہا کہ” جانچ کے دوران پتہ چلا ہیکہ آندورے کے ساتھ جس نے دابھولکر پر گولی چلائی تھی وہ کالسکر تھا”۔
ڈھاکنے نے کہا مزید معلومات نکالنے کے لیے سی بی آئی کو اس کی کسٹڈی چاہیے تھی۔ اس سازش کا خلاصہ اس سے قبل گرفتار وریندر تاوڑے، کالسکر اور دیگر کے ذریعہ ہوا۔ وکیل دفاع دھرم راج چاندلی نے کسٹڈی کی مخالفت کی تھی۔
سی بی آئی نے اب تک قتل میں استعمال بندوق اور گاڑی حاصل نہیں کر پائی ہے
واضح ہوکہ اورنگ آباد کے دولت آباد سے تعلق رکھنے والے کالسکر کو ATS نے پچھلے مہینے اگست میں گرفتار کیا تھا۔ سی بی آئی نے کالسکر کو ATS کی تحویل اے پیر کو اپنی تحویل میں لیا تھا۔ سی بی آئی نے پچھلے ہفتہ ہی اس معاملے میں راجیش بنگارے اور امیت دگویکر کو گرفتار کیا تھا۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!