Published From Aurangabad & Buldhana

جموں و کشمیر: راجوری میں ایل او سی پر گولہ باری، ایک فوجی حولدار شہید، دوسرا زخمی

جموں: جموں و کشمیر کے ضلع راجوری کے نوشہرہ سیکٹر میں لائن آف کنٹرول پر جمعہ اور ہفتے کی درمیانی شب ہندوستان اور پاکستان کی فوج کے درمیان گولہ باری کے نتیجے میں ایک فوجی حوالدار شہید اور دوسرا زخمی ہو گیا۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ پاکستانی فوج نے جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ضلع راجوری میں ایل او سی پر نوشہرہ سیکٹر میں جمعہ اور ہفتے کی درمیانی شب بھارتی چوکیوں کو نشانہ بنا کر گولہ باری کی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ گولہ باری کے نتیجے میں ایک حوالدار سمیت دو فوجی جوان زخمی ہوگئے جن میں سے بعد ازاں فوجی حوالدار زخموں کی تاب نہ لاکر دم توڑ گیا جبکہ دوسرا فوجی جوان فوجی اسپتال میں زیر علاج ہے۔ قابل ذکر ہے کہ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان سال 2003 میں جنگ بندی معاہدہ طے پانے کے باوجود بھی جموں و کشمیر کے سرحدوں پر طرفین کے درمیان ایک دوسرے کے ٹھکانوں کو نشانہ بنانے کا سلسلہ تواتر کے ساتھ جاری ہے۔

جموں و کشمیر کی سرحدوں پر طرفین کے درمیان گزشتہ تین برسوں کے دوران زائد از ساڑھے آٹھ ہزار بار جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی ہوئی ہے۔ وزارت امور داخلہ نے جموں کے ایک کارکن کی طرف سے دائر ایک آر ٹی آئی کے جواب میں انکشاف کیا ہے کہ یکم جنوری 2018 سے سال رواں کے ماہ جولائی تک جموں و کشمیر میں سرحدوں پر پاکستان نے 8 ہزار 5 سو 71 بار جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی ہے۔

یو این آئی

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!