Published From Aurangabad & Buldhana

جعل سازی کے جرم میں دو نائجیریائی شہری کو 3 سال کی سزا

اورنگ آباد:- بیرون ملک نوکری دلوانے کے نام پر ایک خاتون کے ساتھ 15 لاکھ کی دھوکا دہی کرنے پر آج دو نائجیریائی جعلسازوں کو تین سال جیل کی سزا سنائی گئی ہے۔
اےسی پی کرائم رامیشور تھورات اور پولس انسپیکٹر گجانن کلیانکر نے بتایا کہ دو نائجیریائی شہری اگسٹین اوجےچوکو اور جارج چوکنوک ویلک نے شکایت کار کو فیس بک کے ذریعہ اچھی تنخواہ پر بیرون ملک نوکری دلانے کا وعدہ کیا تھا۔ بات چیت آگے بڑھنے پر واٹس ایپ کے ذریعہ بھی ربط رکھا گیا۔
جولائی 2016 میں ان لوگوں نے اس خاتون کو تحفہ بھیجنے کی بات کہی۔ کچھ دن بعد ایک خاتون کے ذریعہ فون آیا کہ 2.50 لاکھ ڈالر کا ایک پارسل دہلی ہوائی اڈے پرآیا ہے۔ اس خاتون نے پارسل کا حوالہ دیتے ہوئے جیل کی دھمکی دیتے ہوئے ایک بنک اکاؤنٹ میں 15 لاکھ روپئے جمع کرنے کی بات کہی۔
جب اس خاتون کو پتہ چلا کہ اس کے ساتھ دھوکا ہوا ہے تو اس نے کرانتی چوک پولس دفتر میں شکایت درج کروائی۔ اس وقت کے پولس انسپیکٹر ناگناتھ کوڑے (جو اب اے سی پی ہیں) نے جعل سازی اور آئی ٹی ایکٹ کے تحت کیس درج کیا۔
کیس کی سنوائی اور جرم ثابت ہونے کے بعد جج ایس بی پوار نے دونوں کو تین سال کی سزا سنائی۔ وکیل بی این راٹھوڑ نے اس کیس کو پیش کیا۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!