Published From Aurangabad & Buldhana

بہار میں بھی ’لو جہاد‘ روکنے کے لیے بنایا جائے گا قانون: گری راج سنگھ

اتر پردیش سمیت بی جے پی حکمراں کئی ریاستوں میں ’لو جہاد‘ روکنے کے لیے قانون لانے کی تیاریاں چل رہی ہیں، اور اب بہار میں بھی اس کے آثار نظر آنے لگے ہیں۔ حالانکہ نتیش کمار اس طرح کی چیزوں سے ہمیشہ بچتے نظر آئے ہیں، لیکن اس مرتبہ چونکہ بی جے پی نے جنتا دل یو کے مقابلے کہیں زیادہ سیٹیں اسمبلی انتخاب میں حاصل کی ہیں، اس لیے وزیر اعلیٰ نتیش کمار پر دباؤ یقینی ہے۔ بی جے پی کے شعلہ بیان لیڈر اور مرکزی وزیر گری راج سنگھ نے ’لو جہاد‘ کے تعلق سے جو بیان دیا ہے اس سے یہی ظاہر ہوتا ہے۔ انھوں نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے واضح لفظوں میں کہا کہ ’’بہار میں لو جہاد روکنے کے لیے قانون بنایا جائے گا۔‘‘

بیگوسرائے میں صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے گری راج سنگھ نے کہا کہ کچھ ریاستیں لو جہاد کو روکنے کے لیے قانون لا رہی ہیں، لو جہاد پر روک کا قانون پورے ملک میں نافذ کیا جانا چاہیے۔ انھوں نے مزید کہا کہ ’’وقت کی مانگ کو دیکھتے ہوئے لو جہاد پر حکومت کو سختی کرنی چاہیے۔‘‘

قابل ذکر ہے کہ اتر پردیش میں حال ہی میں ’لو جہاد‘ کے خلاف قانون لانے کی بات کہی گئی تھی۔ ہائی کورٹ کے ایک فیصلے کا حوالہ دیتے ہوئے ریاست کے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ نے لو جہاد کے خلاف قانون بنانے کا اعلان کیا گیا تھا۔ یوگی آدتیہ ناتھ نے اس پر بولتے ہوئے کہا تھا کہ اس سے عدالتی حکم کی تعمیل کے ساتھ ساتھ بہن بیٹیوں کی عزت افزائی بھی ہوگی۔

قومی آواز بیورو

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!