Published From Aurangabad & Buldhana

اورنگ آباد: ہر ماہ بیوی کے تنخواہ چھین لینے کی وجہ سے شوہر نے کی خود کشی

اورنگ آباد:۔ شہر میں ایک 32سالہ آدمی کے پھانسی لیکر خودکشی کرنے کے تقریباً ایک ہفتہ بعد پولس نے اس کی بیوی اور سسرال والوں کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے۔
خودکشی کرنے والا باباصاحب شندے اپنی بیوی کے ساتھ گنگاپور تعلقہ کے شیورائی گاؤں میں رہتا تھا۔ اپنی بیوی کے ساتھ زبانی جھگڑے کے بعد شندے 7؍اگست کو گھر سے چلا گیا تھا۔چند دن بعد اس کا لاش پاورواستی کے انجینئرنگ کالج کے پیچھے ایک پیڑ سے لٹکی ہوئی ملی۔

آدمی کے ساتھ استحصال کا علم پولس کو تب ہوا جب وہ اسکے گھر والوں کے پاس پہنچی۔ شندے کے 70سالہ والد مچھیندر کی شکایت کے مطابق اس کا بیٹا ایک نجی کمپنی میں ملازم تھا۔ اپنی بیوی کی ہر ماہ اس سے تنخواہ چھین لینے اور اپنے حساب سے خرچ کرنے کی حرکتوں سے وہ بے حد پریشان رہتا تھا۔اور اسی تناؤ کی تاب نہ لاکر اس نے یہ انتہائی قدم اٹھا لیا۔ شندے کے گھر والے ویجا پور کے ایکودی سگج گاؤں میں رہتے ہیں۔

پولس نے اس معاملہ پر کہا کہ شکایت کے مطابق شندے اپنے والدین کے گاؤں میں واپس رہنے کے لئے جانا چاہتا تھا لیکن اسکی بیوی اس بات کی سخت مخالفت کرتی تھی اور اس کے لئے اپنے بھائیوں اور والدین کے ذریعہ دباؤ ڈالتی تھی۔جس کی وجہ سے اکثر گھر میں جھگڑے ہوتے رہتے تھے۔تفتیشی افسر گنیش پوملکر نے کہا کہ اسکی بیوی کے خلاف لگے الزامات کی تفتیش کی جارہی ہے۔ افسر نے کہا کہ شکایت میں درج کسی بھی شخص کو فلحال گرفتار نہیں کیا گیا ہے۔ پولس ابھی ثبوت جمع کرنے میں لگی ہوئی ہے۔

You might also like

Subscribe To Our Newsletter

You have Successfully Subscribed!